سیالکوٹ الیکشن میں مبینہ دھاندلی کے خلاف مسلم لیگ ن کا بڑا قدم اٹھانے کا عندیہ 

سیالکوٹ الیکشن میں مبینہ دھاندلی کے خلاف مسلم لیگ ن کا بڑا قدم اٹھانے کا ...
سیالکوٹ الیکشن میں مبینہ دھاندلی کے خلاف مسلم لیگ ن کا بڑا قدم اٹھانے کا عندیہ 

  

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) سیالکوٹ الیکشن میں مبینہ دھاندلی  کے خلاف مسلم لیگ ن نے قانونی چارہ جوئی کرنے کا عندیہ دے دیا۔

مسلم لیگ ن کے رہنماعطا تارڑ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سیالکوٹ الیکشن کے حوالے سے پارٹی میں مشاورت مکمل ہو چکی ہے ،سیالکوٹ الیکشن میں ووٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا ، ووٹ چوری پر قانونی چارہ جوئی کرنے جا رہے ہیں ، مسلم لیگ ن کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا ہے ۔

سیشن کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عطا تارڑ نے کہا کہ شہباز شریف پر جھوٹے مقدمات درج کئے گئے ہیں ، نیب تحقیقات کے باوجود کرپشن ثابت نہیں ہو رہی ، شہباز شریف کے خلاف کیس میں کوئی غیر قانونی بات سامنے نہیں آئی ۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی 38 سیالکوٹ سے مسلم لیگ ن کو شکست دے دی تھی ،  2018 کے عام انتخابات میں اس نشست پر تحریک انصاف کو 17 ہزار ووٹوں سے شکست ہوئی تھی۔

پی پی 38 ک میں تحریک انصاف کے امیدوار احسن سلیم بریار نے مسلم لیگ ن کے طارق سبحانی کو تقریباً 7 ہزار ووٹوں سے شکست دی تھی ۔

پی پی 38 کی یہ نشست مسلم لیگ ن کے خوش اختر سبحانی کے انتقال کے باعث خالی ہوئی تھی،  انہوں نے 2018 کے عام انتخابات میں 57 ہزار 617 ووٹ حاصل کرکے یہاں سے فتح حاصل کی تھی۔ ان کے مدمقابل تحریک انصاف کے امیدوار سعید احمد بھلی 40 ہزار 531 ووٹ حاصل کرسکے تھے۔

مزید :

اہم خبریں -سیاست -