ٹوکیو اولمپکس، نا اہل قرار دیے جانے پرباکسر نے اکھاڑے میں ہی دھرنا دے دیا

ٹوکیو اولمپکس، نا اہل قرار دیے جانے پرباکسر نے اکھاڑے میں ہی دھرنا دے دیا
ٹوکیو اولمپکس، نا اہل قرار دیے جانے پرباکسر نے اکھاڑے میں ہی دھرنا دے دیا

  

ٹوکیو(مانیٹرنگ ڈیسک) فرانسیسی باکسر موریڈ الیف اولمپکس میں ’نااہل‘ قرار دیئے جانے پر اکھاڑے (Ring)میں ہی احتجاجاً دھرنا دے کر بیٹھ گیا۔ ڈیلی سٹار کے مطابق گزشتہ روز اولمپکس مقابلوں میں موریڈ الیف اور برطانوی باکسر فریزر کلارک کے درمیان میچ ہو رہا تھا جب موریڈ کو یہ کہہ کر نااہل قرار دے دیا گیا کہ وہ کھیل کے دوران سر کا بہت زیادہ استعمال کر رہے تھے۔

رپورٹ کے مطابق موریڈ الیف میچ کے پہلے راﺅنڈ میں فریزر کلارک کو شکست دے چکے تھے اور دوسرے راﺅنڈ میں بھی وہ لگ بھگ جیت ہی چکے تھے، دوسرے راﺅنڈ کے ختم ہونے میں محض چند سیکنڈز باقی تھے جب موریڈ کو ’ڈِس کوالیفائی‘ کر دیا گیا۔ جیتا ہوا میچ ہارجانے اور نااہل ہو جانے پر دل شکستہ موریڈ الیف اکھاڑے کے ایک کونے پر جا کر بیٹھ گئے اور ایک گھنٹے تک احتجاجاً وہیں دھرنا دیئے رکھا۔ 

رپورٹ کے مطابق موریڈ الیف کو نااہل قرار دیئے جانے پر برطانوی باکسر فریزر کلارک سیمی فائنل میں پہنچ گئے ہیں اور اگر اب وہ ہار بھی جاتے ہیں تو کانسی کا تمغہ جیت کر اپنے وطن لے جائیں گے۔اس واقعے کے بعد فریزر کلارک کا کہنا تھا کہ ”موریڈ بہترین باکسر ہیں۔ میں نے دوران میچ انہیں کہا بھی تھا کہ وہ دانستہ طور پر سر کا استعمال کر رہے ہیں، میں نے سمجھایا تھا کہ وہ اپنی ساکھ خراب مت کریں مگر انہوں نے یہ حرکت جاری رکھی جس پر انہیں نااہل قرار دے دیا گیا۔“

مزید :

کھیل -