سنٹرل جیل میں زیادتی کے الزامات صحیح ہےں :خواتین کمیشن کا ڈی جی جیل خانہ کے نام مکتوب

سنٹرل جیل میں زیادتی کے الزامات صحیح ہےں :خواتین کمیشن کا ڈی جی جیل خانہ کے ...

سری نگر ( کے پی ائی) ریاستی خواتین کمیشن نے سنٹرل جیل میں خواتین کے ساتھ سی آر پی ایف خواتین اہلکاروں کی طرف سے زیادتی کے الزامات کو صحیح قرار دیتے ہوئے ڈی جی جیل خانہ جات سے مطالبہ کےا ہے کہ اس سلسلہ کو فوری طور بند کر کے تلاشی کارروائی میں جموں وکشمیر پولیس کی خواتین اہلکاروں کو بھی شامل کیا جائے۔ ڈی جی جیل خانہ جات کے نام تحریر یک صفحاتی خط میں کمیشن نے ڈی جی جیل خانہ سے جواب طلب کرتے ہوئے پوچھا ہے کہ مستقبل میں محکمہ جیل خانہ اس طرح کے واقعات کو روکنے کیلئے کیا اقدامات کر رہا ہے۔ ڈی جی جیل خانہ سے جواب حاصل کرکے کمیشن اپنی سفارشات سے حکومت کو آگاہ کرے گا۔ ریاستی خواتین کمیشن کی سربراہ شمیمہ فردوس نے کہا کہ خواتین کمیشن کی ایک ٹیم نے سنٹرل جیل کادورہ کیا اور وہاں جیل انتظامیہ اور مقید خواتین و ملاقات کیلئے آنے والی خواتین سے استفسارات کئے جس کے بعد وہ اس نتیجہ پر پہنچے کہ جیل میں سی آر پی ایف خواتین اہلکاروں کا رویہ خواتین کے تئیں تذلیل آمیز ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خواتین کمیشن نے اس مسئلہ کا سنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے ڈ جی جیل خانہ کو خط تحریر کیا ہے جس میں ان سے وضاحت طلب کی گئی ہے اور جوں ہی ان کا جواب موصول ہوتا ہے تو کمیشن اپنی سفارشات سے حکومت کو آگاہ کر دے گا ۔ شمیمہ فردوس کا کہنا تھا کہ جیل کے دورے کے دوران انہوں نے محبوس خواتین سے بھی بات چیت کی اور انہوں نے ان کو بتایا کہ جب بھی ان کو جیل سے باہر لے جایا جاتا ہے تو واپسی پر سی آر پی ایف خواتین اہلکار تلاشی کے نام پر ان کو’برہنہ ‘ کر دیتی ہے ۔اا

مزید : عالمی منظر