مہنگائی پنجاب اسمبلی کے’ عتاب‘ سے بچ گئی

مہنگائی پنجاب اسمبلی کے’ عتاب‘ سے بچ گئی
مہنگائی پنجاب اسمبلی کے’ عتاب‘ سے بچ گئی

  

لاہور ( خبر نگار خصوصی ) پنجاب اسمبلی میںحکومت اور اپوزیشن نے مبینہ’ مک مکا‘ کے بعد مہنگائی پر بحث کے وقت کورم توڑ دیا اور مہنگائی کو ’شکست‘ دیدی ۔ سپیکر رانا محمد اقبال کی صدارت میںاجلاس کسی خلل اور ہنگامہ خیزی کے ساتھ پرامن چلتی رہی لیکن جیسے ہی ’پرائس کنٹرول ( مہنگائی) پر عام بحث کا وقت آیا تو اپوزیشن لیڈر ایوان سے غائب پائے گئے جبکہ حکومتی اراکین کی بھی بہت کم تعداد ر ہ گئی جس پرتحریک ِ انصاف کے عارف عباسی نے کورم کی نشاندہی کردی ۔ ان کا کہنا تھا کہ ایوان میں موجود اراکین کی تعداد سے لگتا ہے کہ حکومتی اراکین بحث میں دلچسپی نہیں رکھتے جبکہ مہنگائی سے اہم کوئی بات نہیں ۔ کورم نہ ہونے پر سپیکر نے اجلاس پانچ منٹ کیلئے ملتوی کردیا لیکن حکومتی اراکین نے کورم پورا کرنے میں دلچپی کا اظہار نہ کیا۔ جس پر سپیکر نے کارروائی مزید پندرہ منٹ کیلئے ملتوی کی تو وزراءسمیت حکومتی اراکین ایوان سے اٹھ کر چلے گئے ۔ پندرہ منٹ کے بعد جب سپیکر نے گنتی کروائی تو371اراکین کے ایوان میں تیس سے بھی کم اراکین موجود تھے جس پر سپیکر نے اجلاس منگل کی صبح دس بجے تک ملتوی کردیا ۔ منگل کو پرائیویٹ ممبران کا دن ہونے کے باعث مہنگائی مزید ایک روز زیرِ بحث آنے سے بچ گئی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -