روس نے بمبار طیاروں کو طویل فاصلے پر مار کرنے والے میزائلوں سے لیس کردیا

روس نے بمبار طیاروں کو طویل فاصلے پر مار کرنے والے میزائلوں سے لیس کردیا
روس نے بمبار طیاروں کو طویل فاصلے پر مار کرنے والے میزائلوں سے لیس کردیا

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی کی طرف سے روس کا جنگی طیارہ مار گرائے جانے کے بعد دونوں ممالک میں سخت کشیدگی کی فضا برقرار ہے ۔ طیارہ گرانے کے جواب میں روس نے ترکی پر معاشی پابندیاں عائد کردی ہیں جبکہ ترکی نے روس کے معافی مانگنے کے مطالبے کورد کردیا ہے۔ روس نے اپنے رد عمل میں شام میں داعش کے ٹھکانوں پر بمباری تیز کردی ہے جبکہ ترکی نے بھی داعش کے خلاف کارروائیاں کرنے کیلئے فرانس کو اپنی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دیدی ہے۔ روس نے داعش کے خلاف مزید اقدامات کرتے ہوئے داعش پربمباری کرنیوالے طیاروں کوفضاسے فضامیں مارکرنیوالے میزائلوں سے لیس کردیا۔

تفصیلات کے مطابق طیارہ گرائے جانے کے واقعے کے بعدروسی فضائیہ نے داعش پربمباری کیلئے اپنے لڑاکا طیاروں کا بے دریغ استعمال شروع کررکھا ہے اور اب روس نے مزید اقدامات کرتے ہوئے اپنے لڑاکا طیاروں کو جدید ترین میزائلوں su.34سے لیس کردیا ہے۔روسی فضائیہ کے ترجمان نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ طیاروں کودفاعی مقصدکیلئے میزائلوں سے لیس کیاگیاہے۔ بمبارطیارے طویل فاصلے پرمارکرنیوالے میزائلوں سے لیس ہیں۔ ترجمان نے بتایا کہ روسی بمبارطیارے دشمن کو60کلومیٹرکے احاطے میں نشانہ بناسکتے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -