حکمرانوں کو سفارت کاری نہیں سرمایہ کاری کاتجربہ ہے،یاسین گھمن

حکمرانوں کو سفارت کاری نہیں سرمایہ کاری کاتجربہ ہے،یاسین گھمن
حکمرانوں کو سفارت کاری نہیں سرمایہ کاری کاتجربہ ہے،یاسین گھمن

  

جوہانسبرگ(بیورورپورٹ) پاکستان تحریک انصاف پر یٹو ریا منتانہ کے رہنما یاسین گھمن نے کہا ہے کہ نااہل حکمرانوں کو سفارت کاری نہیں سرمایہ کاری کاتجربہ ہے۔وہ دھڑادھڑ کارخانے اورفیکٹریاں بنا کرسکتے مگر پاکستان کی تعمیروترقی ان کے بس کی بات نہیں ہے ۔حکمرانوں کواپنے غیرملکی ہم منصب کے ساتھ پراعتما داندازسے گفتگوکرنے کاسلیقہ تک نہیں آتا۔ حکمرانوں کی نااہلی سے پاکستان کے قومی موقف کونقصان پہنچا ۔ مختلف ملکوں کا میڈیا بھی ایٹمی پاکستان کے نروس حکمرانوں کا مذاق اڑا رہا ہے ۔حکمران اپنے بیرونی دوروں کی بدترین ناکامی کے باوجودکامیابی کاڈھول پیٹ رہے ہیں۔ دبنگ کپتان عمران خاں سے بہتر کوئی پاکستان کی وکالت نہیں کرسکتا۔وہ اپنے زمانہ کرکٹ میں دباؤ کی حالت میں زیادہ اچھاکھیلتے رہے ہیں ۔روز نامہ پاکستان کے بیورو چیف ندیم شبیر سے گفتگو کرتے ہوئے یاسین گھمن نے مزید کہا کہ عمران خان کے ساتھ ملتے ہوئے غیرملکی سفارتکاراورسیاستدان ان کی شخصیت سے مرعوب ہوجاتے ہیں ۔ عمران خان کی خوداعتمادی اورخوداری آج بھی اپنی مثال آپ ہے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کی پسندیدگی اورپذیرائی کسی جعلی سروے کی مختاج نہیں ،لوگ آج بھی ان پرجان ،ووٹ اورنوٹ نچھاورکرتے ہیں ۔حکمرانوں کوشہرت اورعزت میں فرق معلوم نہیں ، ان کی شہرت ہمارے چیئرمین عمران خان کی عزت کے آگے کچھ بھی نہیں ہے۔یاسین گھمن نے کہا کہ شریف برادران نے جاتی امراء میں ہزاروں ایکٹراراضی پراپنے محلات تعمیر کئے جبکہ عمران خان نے عوام کے دل میں اپناگھر بنایا ۔ عمران خان کے وزیراعظم منتخب ہونے کی صورت میں عام آدمی کی اسمبلیوں تک رسائی میں کوئی رکاوٹ نہیں رہے گی ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کافلسفہ سیاست عام آدمی کواقتدارکی سیڑھی نہیں بلکہ بااختیار اوربااعتمادبنانا ہے۔

مزید :

عالمی منظر -