سال کے آخر میں ٹیکسوں کی بھرمار نیا بجٹ ہے،ثمینہ خالد گھرکی

سال کے آخر میں ٹیکسوں کی بھرمار نیا بجٹ ہے،ثمینہ خالد گھرکی

  

لاہور(نمائندہ خصوصی )پیپلز پارٹی لاہور کی صدر ثمینہ خالد گھرکی نے کہا ہے کہ حکومت نے سال کے آخر میں عوام پر ٹیکسوں کی بھرمار کرکے ایک نیا بجٹ عوام پر مسلط کردیا ہے حکومت کے اس (نئے بجٹ) کی وجہ سے ملک میں مہنگائی کا ایک نیا طوفان آئے گا ۔

اور عوام کا جینا مشکل ہو جائے گا حکومت نے عوام کے کمزرو کندھوں پر ٹیکسوں کامزیدبوجھ ڈال کر اچھا نہیں کیا ہے عوام کے روز مرہ کے استعمال کی اشیاء جن میں دہی،مکھن،ڈیری ،قدرتی شہد اور پھل وغیرہ شامل ہیں ان پر ٹیکس لگانے سے غریب عوام کی زندگی اجیرن ہوجائے گی اور پہلے سے خودکشیاں کرنے والی قوم کی مایوسیوں میں بے حد اضافہ ہو گا ۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ آئی ایم ایف کی عوام دشمن شرائط پر لگائے گئے ان نئے ٹیکسوں کو فی الفور واپس لیا جائے افسوس کی بات ہے کہ حکومتی پالیسوں کی وجہ سے پیدا ہونے والا بچہ بھی غیر ملکی بینکوں کا مقروض ہو چکا ہے کشکول توڑنے کے دعوے کرنے والوں نے عوام کو کشکول ہاتھ میں لینے پر مجبور کردیا ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -