ڈی سی او لاہور کیخلاف دائر توہین عدالت کی درخواست کی سماعت 10اکتوبر تک ملتوی

ڈی سی او لاہور کیخلاف دائر توہین عدالت کی درخواست کی سماعت 10اکتوبر تک ملتوی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے عدالتی حکم کے باوجود نابینا بزرگ گداگروں کو ماہانہ وظیفہ نہ دینے اور ان کی پکڑدھکڑ کا سلسلہ جاری رکھنے پر ڈی سی او لاہور کے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواست کی سماعت 10اکتوبر تک ملتوی کردی۔ چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ اعجازالاحسن کی عدالت میں کیس کی سماعت ہوئی ، درخواست گزار روبرو رضاالرحمن سمیت دیگرز نابینا بزرگ گداگروں نے موقف اختیارکررکھا ہے کہ ان کے اہل خانہ نے انہیں نابینا ہونے کی بنا ء پر گھروں سے نکال دیا،وہ اپنی گزر بسر کے لئے ٹولیوں کی شکل میں نعتیں پڑھتے ہیں اورلوگ ان کی مدد کردیتے ہیں۔ مگر ضلعی انتظامیہ پولیس کے ذریعے انہیں پکڑ کے تھانے میں بند کر دیتی ہے۔انہوں نے بتایا کہ عدالت عالیہ نے ڈی سی او لاہور کو بزرگ گداگروں کو ماہانہ وظیفہ ادا کرنے اور انکی پکڑ دھکڑ کا سلسلہ بند کرنے کے حوالے سے درخواست پر ایک ماہ میں فیصلہ کرنے کاحکم دیا تھا لیکن عدالتی حکم کے باوجود انہیں ماہانہ وظیفہ دینے اوران کی پکڑ دھکڑ سے منع کرنے کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا جو کہ واضح طور پر توہین عدالت ہے۔ عدالت میں درخواست گزاروں کے وکیل کے پیش نہ ہونے کیباعث کیس کی سماعت بغیر کسی کارروائی کے 10دسمبر تک ملتوی کردی۔

مزید :

صفحہ آخر -