لڑکی کی اخلاق باختہ حرکات، جرمنی میں غیرت کے نام پر قتل کرنیوالے ماں باپ کو عمر قید کی سزاہوگئی

لڑکی کی اخلاق باختہ حرکات، جرمنی میں غیرت کے نام پر قتل کرنیوالے ماں باپ کو ...
لڑکی کی اخلاق باختہ حرکات، جرمنی میں غیرت کے نام پر قتل کرنیوالے ماں باپ کو عمر قید کی سزاہوگئی

  

برلن (مانیٹرنگ ڈیسک) جرمنی کی عدالت نے غیرت کے نام پر اپنی بیٹی لاریب خان کو قتل کرنے والے ایک پاکستانی جوڑے کو عمر قید کی سزا سنا دی گئی۔مغربی شہر ڈامزٹاٹ کی مقامی عدالت نے 52 سالہ والد کو اپنی 19سالہ بیٹی کو قتل کرنے کا مجرم قرار دیا اور 41 سالہ والدہ کو بھی قتل میں مدد کرنے میں سزا سنائی، عدالت کو بتایا گیا کہ اس جوڑے نے جنوری میں شادی سے قبل جنسی تعلقات قائم کرنے پر اپنی بیٹی کو مار دیا تھا۔ وکیل دفاع نے عدالت کم سزا کی درخواست کی تھی، سزا یافتہ میاں بیوی 15سال بعد پیرول پر رہائی کی درخواست دے سکیں گے۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کے مطابق اسداللہ خان نے بتایاکہ اسے یقین ہے ، اس کی صاحبزادی نے ایک لڑکے سے تعلقات بناکر خاندان کی عزت خاک میں ملادی ، وہ لاریب کی بھی ارینج میرج کرناچاہتے تھے جیسے کہ وہ خود کرچکے تھے ، اسداللہ کی اہلیہ اور مقتولہ کی والدہ شازیہ نے کہاکہ ان کی بیٹی کئی راتیں مسلسل گھر سے باہر رہی اور سکارف پہننا بھی چھوڑدیاتاہم وہ اپنے خاوندکو اپنی بیٹی کو قتل کرنے سے نہ روک سکی ۔ خاتون کاکہناتھاکہ وہ بیماری میں مبتلاءہیں اور تشدد کے دوران چاہتے ہوئے بھی نہ چلاسکیں ۔

شازیہ کاکہناتھاکہ ایک دن اُنہیں پولیس کی طرف سے ایک خط ملا جس میں بتایاگیاتھاکہ وہ کنڈوم چراتے ہوئے پکڑی گئی اور اس وقت واضح ہوگیاتھاکہ لاریب کے جنسی تعلقات ہیں اور یہ خط جب اپنے خاوند کو دکھایاتو اس نے فوٹو بھی بنالیا۔وکیل دفاع نے سزاءکم کرنے کی اپیل کی تاہم جوڑے کو 15سال قید گزارنے کے بعد پیرول پر رہائی کی اپیل کرنے کا حق دیدیاگیا۔

مزید :

جرم و انصاف -