وہ میاں بیوی جو شادی کے 5 سال بعد بھی کنوارے ہی رہ گئے کیونکہ۔۔۔

وہ میاں بیوی جو شادی کے 5 سال بعد بھی کنوارے ہی رہ گئے کیونکہ۔۔۔
وہ میاں بیوی جو شادی کے 5 سال بعد بھی کنوارے ہی رہ گئے کیونکہ۔۔۔

  

بیجنگ (نیوز ڈیسک)موٹاپا انسان کے لئے کئی طرح کے مسائل کا باعث بنتا ہے لیکن اگر یہ حد سے بڑھ جائے تو اس کا وہ افسوسناک نقصان بھی ہوسکتا ہے جو دو انتہائی موٹے چینی میاں بیوی کو اٹھانا پڑا ہے۔

لین یوئے اور ڈینگ یینگ کی شادی تقریباً 5 سال قبل ہوئی لیکن وہ تاحال شدید خواہش کے باوجود اولاد کی نعمت سے محروم ہیں۔ جریدے نیویارک پوسٹ کے مطابق لین اور ڈینگ کا کہنا ہے کہ انہیں بھی دیگر شادی شدہ جوڑوں کی طرح اولاد کی سخت کمی محسوس ہوتی ہے اور وہ اس کے حصول کے متمنی رہے ہیں لیکن اپنے موٹاپے کی وجہ سے وہ اولاد کے حصول کے لئے پہلا ضروری قدم بھی نہیں اٹھاپائے ۔ مجموعی طور پر 882 پاﺅنڈ (تقریباً 400 کلو گرام) وزن کے حامل اس جوڑے کا کہنا ہے کہ شادی کو پانچ سال گزرگئے لیکن وہ اب تک ایک دفعہ بھی ازدواجی فرائض ادا نہیں کرپائے۔

مزید جانئے: خاتون نے غذا میں صرف ایک تبدیلی کرکے چند ماہ میں 41 کلو وزن کم کر ڈالا، آپ بھی آزما کر دیکھیں

اس جوڑے کا کہنا ہے کہ وہ شادی کے باوجود ازدواجی خوشی سے محروم رہنے پر سخت دکھی ہیں اور اب انہوں نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ گیسٹرک بائی پاس سرجری کروائیں گے تاکہ ان کے موٹاپے میں کچھ کمی آئے اور وہ حصولِ اولاد کے سفر میں پہلاقدم بڑھاسکیں۔ دونوں نے اس مقصد کے لئے چانگ چون شہر کے ایک مشہور کلینک سے رابطہ کرلیا ہے اور سرجری سے پہلے ضروری ورزشوں کا بھی آغاز کردیا ہے تاکہ ایک دن وہ بھی دیگر شادی شدہ جوڑوں کی طرح زندگی کی خوشیوں سے لطف اندوز ہوسکیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -