بجلی بندش، شہری عذاب میں ، گیس کی کمیابی، ہوٹل مالکان کی موج

بجلی بندش، شہری عذاب میں ، گیس کی کمیابی، ہوٹل مالکان کی موج

ملتان رحیم یار خان‘احمد پور شرقیہ( سٹاف رپورٹر‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ سٹی رپورٹر)قاسم پور گرڈ سٹیشن ملتان سے گزشتہ روز پھر مسلسل 6گھنٹے بجلی بند رہی ‘صارفین کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا‘ بتایا گیا ہے کہ قاسم پور گرڈ سٹیشن سے کچھ دنوں سے صبح ساڑھے 8بجے سے اڑھائی بجے تک مسلسل 6گھنٹے بجلی بند کی جارہی ہے جس کے باعث ملتان کے ایک بڑے علاقے میں مسائل پیدا ہو رہے ہیں ‘ گزشتہ(بقیہ نمبر35صفحہ7پر )

روز بھی بجلی مسلسل 6گھنٹے تک بند رکھی گئی جس کے باعث صارفین کو شدید مشکلات درپیش آئیں ‘شٹ ڈاؤن کے بعد معمول کی لوڈ شیڈنگ شروع کر دی گئی جس پر صارفین نے شدید احتجاج کیا ہے اور کہا ہے کہ ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ نصف کرنے کا حکومتی اعلان مذاق بن کر رہ گیا‘وزیر اعظم نواز شریف نے شہروں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 6گھنٹے سے کم کرکے3گھنٹے اور دیہات میں دورانیہ 8گھنٹے سے کم کرکے 4گھنٹے کر نے کا حکم دیا تھا جس پر تاحال عملدر آمد نہیں ہو سکا۔ دریں اثناء رحیم یارخان اوراس کے گردونواح میں سوئی گیس کی بندش نے ہوٹل مالکان کے وارے نیارے کردئیے۔گیس کی بند کافائدہ اٹھاتے ہوئے ہوٹل مالکان نے تندوری روٹی کاوزن کم اوراس کی قیمت چھ سے سات روپے کررکھی ہے سبزیوں،گوشت کی قیمتوں میں بھی دوگنااضافہ کردیاگیاہے شہریوں محمدنوید،فہیم مسکین،عرفان کمبوہ، ساجدعلی ، حماداصغرجٹ ،قمرستار،استاداصغرجٹ ودیگر کاکہناہے کہ گھروں میں گیس کی عدم دستیابی کے باعث ہوٹل مالکان شہریوں سے کھانوں کی سرعام منہ مانگی قیمتیں وصول کررہے ہیں جبکہ شہری مجبوراًہوٹلوں سے مہنگاکھاناخریدکردووقت کی بھوک مٹارہے ہیں ضلعی انتظامیہ نے ہوٹل مالکان کومنہ مانگے دام وصول کرنے کی کھلی چھوٹ دے رکھی ہے شہریوں نے اعلی حکام سے نوٹس لے کراصلاح واحوال کامطالبہ کیاہے۔احمد پور شرقیہ سے سٹی رپورٹر کے مطابق گیس کے پریشر میں کمی او ر لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں اضافہ سے شہر ی پریشان ، کھانا پکانا مشکل ہو گیا ۔ تفصیل کے مطابق سردی میں ا ضافہ کے ساتھ ہی شہر بھر میں گیس کے پریشر میں کمی کے باعث شہر ی انتہائی پریشانی کا شکار ہیں۔ اور خواتین کے لئے گیس پر کھانا پکانا دو بھر ہو چکا ہے۔ جبکہ وفاقی وزیر گیس و پٹرولیم کے واضع اعلان کے باوجود رات کو دس بجے کی بجائے نو بجے گیس بند کی جاتی ہے۔ اور صبح پانچ بجے کی بجائے ساڑھے چھ بجے بحال کی جا تی ہے۔ جس کی وجہ سے صبح کے اوقات میں اسکول جانے والے بچوں کے لئے ناشتہ بنا نا بھی مسئلہ بن چکاہے۔ شہریوں محمد افضل ، منور قریشی، محمداکبر عباسی ، محمد ارشاد ، فیض محمد ، یاسر بلوچ، اور عمر بلوچ نے بتا یا کہ مقامی دفتر کو کئی مرتبہ گیس پریشر کی کمی کی شکایت کی ہے ۔ مگر کچھ فائد ہ نہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر ماہ گیس کے بلوں میں بھی اضافہ ہوتا جار ہا ہے۔ اور سینکڑوں میں آ نے والے گیس کے بل ہزاروں میں تبدیل ہو گئے ہیں۔ نہ ہی گیس کے بل زیادہ بھیجنے کی کوئی وجہ بتا ئی جاتی ہے ۔ انہوں ریجنل منیجر سوئی گیس بہا ولپو رسے اصلا ح احوال کامطالبہ کیاہے۔

گیس ‘ بجلی

مزید : ملتان صفحہ آخر