بھارتی پارلیمنٹ میں نوٹ بندی کے معاملے پر ہنگامہ ، حزب اختلافات کی مودی پر کڑی تنقید

بھارتی پارلیمنٹ میں نوٹ بندی کے معاملے پر ہنگامہ ، حزب اختلافات کی مودی پر ...

 نئی دہلی(اے این این) بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان زیریں لوک سبھا میں نوٹ بندی کے حکومتی پرحزب اختلاف کی ایک بارپھرشدیدہنگامہ آرائی،سپیکرکو ایوان کااجلاس ملتوی کرناپڑگیا،ادھر قائدحزب اختلاف غلام نبی آزادنے وزیراعظم نریندرمودی کے رویے کوپارلیمنٹ کی تضحیک اورجمہوریت کے لئے نقصان دہ قراردے دیا۔میڈیارپورٹ کے مطابق بھارت میں نوٹ بندی کے مودی سرکار کے فیصلے پرملک بھرمیں لوگ سراپااحتجاج ہیں جبکہ گزشتہ کئی روزسے پارلیمنٹ میں اس معاملے پرحز ب اختلاف کی ہنگامہ آرائی کاسلسلہ جاری ہے ۔جمعرات کو لوک سبھا کااجلاس شروع ہواحزب اختلاف کی جماعتوں کے ارکان نے نوٹ بندی کے فیصلے اوروزیراعظم مودی کے ایوان میں نہ آنے پر پھرہنگامہ آرائی شروع کردی جس پرسپیکر نے ایوان کی کارروائی کچھ دیرکیلئے ملتوی کردی ۔ وقفہ سوالات کے بحث میں نکل جانے کے بعد ایوان کی کارروائی بارہ بجے دوبارہ شروع ہوئی تو ضروری امور کی انجام دہی کے بعد اسپیکر سمترا مہاجن نے وقفہ سوالات شروع کردیا، اسی دوران حزب اختلاف کے متعدد ارکان نوٹ بندی پر بحث کے مطالبے کو لے کر ایوان کے وسط میں آکر شدید نعرے لگانے لگے جس کی وجہ سے کارروائی پورے دن کے لئے ملتوی کردی گئی ۔ادھرقائدحزب اختلاف غلام نبی آزادنے بھارتی اخبار’’انڈین ایکسپریس‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم مودی کے ایوا ن میں نہ آنے پرانہیں کڑی تنقیدکانشانہ بنایا۔انہوں نے کہاکہ میں نے اپنے سیاسی کیرئیرکے دوران گیارہ وزرائے اعظم دیکھے چارکے ساتھ کام بھی کیالیکن جس طرح مودی پارلیمنٹ کی تضحیک کررہے ہیں ایساپہلے کبھی نہیں دیکھا۔انہوں نے کہاکہ مودی کاطرزعمل پارلیمانی جمہوریت کے لئے نقصان دہ ہے۔واضح رہے کہ گذشتہ آٹھ نومبر کو وزیراعظم نریندرمودی کے ذریعے پانچ سو اور ایک ہزار کے نوٹوں پر پابندی کے اعلان کے بعد سے جہاں عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے وہیں اپوزیشن جماعتیں اس معاملے پرحکومت کو مسلسل گھیرنے میں لگی ہوئی ہیں ۔مودی سرکار کا موقف ہے کہ اس نے یہ اقدام ملک سے بلیک منی کا صفایا کرنے کیلئے کیا ہے جبکہ اپوزیشن کا کہنا ہے کہ یہ فیصلہ سوچے سمجھے بغیر کیا گیا ہے اور اس سے عوام اور چھوٹے تاجروں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔

بھارتی پارلیمنٹ

مزید : راولپنڈی صفحہ اول