حمل کے آٹھویں ماہ میں خاتون کے ہاں بچے کی پیدائش کے لئے آپریشن، لیکن دراصل پیٹ میں بچہ نہ تھا بلکہ۔۔۔ ایسا انکشاف کہ واقعی زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا

حمل کے آٹھویں ماہ میں خاتون کے ہاں بچے کی پیدائش کے لئے آپریشن، لیکن دراصل ...
حمل کے آٹھویں ماہ میں خاتون کے ہاں بچے کی پیدائش کے لئے آپریشن، لیکن دراصل پیٹ میں بچہ نہ تھا بلکہ۔۔۔ ایسا انکشاف کہ واقعی زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا

  

گلاسگو(نیوز ڈیسک)سکاٹ لینڈ سے تعلق رکھنے والی ایک بدقسمت خاتون آٹھ ماہ تک خود کو حاملہ سمجھتی رہی لیکن جب وہ اپنے بچے کو دنیا میں خوش آمدید کہنے کی تیاری کر رہی تھی تو ایسا افسوسناک انکشاف سامنے آ گیا کہ بیچاری کی خوشیاں گہرے صدمے میں بدل گئیں۔

دی انڈیپینڈنٹ کے مطابق 27 سالہ لارن نوئلز کو اس بات میں کوئی شک نہیں تھا کہ وہ حاملہ ہیں لیکن حمل کے آٹھویں ماہ جب ان کے پیٹ میں شدید درد اٹھا تو انہیں ہسپتال لے جایا گیا۔ آپریشن ہوا تو یہ بھیانک انکشاف سامنے آیا کہ وہ حاملہ نہیں تھیں بلکہ بچہ دانی میں کینسر کی رسولی پھل پھول رہی تھی۔

ایران کی خوبصورت لڑکی نے انجلینا جولی جیسی دکھنے کیلئے 50سرجیاں کروا لیں ،اب وہ کیسی دکھتی ہے ؟دیکھ کر آپ بھی ڈر جائیں گے

ڈاکٹروں نے آپریشن سے رسولی تو نکال دی لیکن ان کا خیال تھا کہ رسولی کے باعث لارن کی بچہ دانی کو نقصان پہنچا ہے اور انہیں دوبارہ حاملہ ہونے سے گریز کرنا چاہیے۔ خوش قسمتی سے ایک سال کے علاج کے بعد صورتحال بہت بہتر ہوچکی تھی اور وہ ایک بار پھر حاملہ ہوگئیں۔ ان کے پیٹ میں موجود بچہ صحتمند تھا اور حمل کی مدت مکمل ہونے پر وہ ایک بیٹی کی ماں بن گئیں۔ اس بچی کا نام انڈی رکھا گیا جو اب 10 ماہ کی ہوچکی ہے۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

مزید : ڈیلی بائیٹس