”مشکل دور کے وقت لاہور میں عمران خان سے ملاقات ہوئی اور پھر میں۔۔۔ “سابق بھارتی کپتان ساروو گنگولی نے عمران خان سے ملاقات کے بعد اپنی زندگی میں تبدیلی کا ایسا قصہ سنا دیا کہ آپ کو بھی عمران خان پر فخر ہو گا

”مشکل دور کے وقت لاہور میں عمران خان سے ملاقات ہوئی اور پھر میں۔۔۔ “سابق ...
”مشکل دور کے وقت لاہور میں عمران خان سے ملاقات ہوئی اور پھر میں۔۔۔ “سابق بھارتی کپتان ساروو گنگولی نے عمران خان سے ملاقات کے بعد اپنی زندگی میں تبدیلی کا ایسا قصہ سنا دیا کہ آپ کو بھی عمران خان پر فخر ہو گا

  

ممبئی(ڈیلی پاکستان آن لائن )کرکٹ کی دنیا میں بہت سے کھلاڑیوں نے لیجنڈ پاکستانی کپتان عمران خان سے بہت کچھ سیکھا ہے ،عمران خان کھلاڑیوں کو نہ صرف کرکٹ ٹیکنیکس کی ٹپس دیتے رہتے ہیں بلکہ زندگی میں اچھا اور کامیاب انسان بننے کے حوالے سے بھی مفید مشورے دیتے ہیں ،یہ ہی وجہ ہے کہ روایتی حریف بھارت کے بھی کھلاڑی عمران خان کی تعریف کرنے پر مجبور ہو جاتے ہیں ۔ایسا ہی ایک قصہ سابق بھارتی کپتان ساروو گنگولی نے بھی سنا یا ۔ہوا کچھ یوں کہ 2005 میں سابق بھارتی کوچ گریگ چیپل نے اس وقت کے کپتان گنگولی کے خلاف بھارتی کرکٹ بورڈ کو ایک ای میل بھیجی تھی، جس میں کہا گیا تھا کہ گنگولی 2002 سے کوئی خاطر خواہ کارکردگی نہیں دکھا سکے ، اس لیے ان کی جگہ کوئی دوسرا کپتان مقرر کیا جانا چاہیے اور انہیں ٹیم میں شامل نہیں کیا جانا چاہیے۔کپتان اور کوچ کے درمیان اس تنازع نے کھلاڑیوں میں بھی تفریق پیدا کر دی تھی ، جس کے بعد گنگولی کو کپتانی سے ہٹا دیا گیا تھا۔

ہندوسٹان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق اس تنازع کے حوالے سے بات کرتے ہوئے گنگولی نے کہایہ 2006 کی بات ہے، میں 6 سال تک ٹیم کا کپتان رہا اور پھر اچانک مجھ سے سب کچھ چھین لیا گیا۔انہوں نے بتایاکہ وہ بہت مشکل دور تھا لیکن اس نے مجھے ایک بہتر انسان بننے میں مدد فراہم کی۔ان کا کہنا تھا کہ اسی عرصے کے دوران ایک مرتبہ لاہور میں عمران خان سے میری ملاقات ہوئی، وہ بھارتی کرکٹ کو بہت قریب سے دیکھ رہے تھے اورمیرے عمران خان سے بہت اچھے تعلقات ہیں، انہوں نے مجھے کچھ ایسا کہا، جسے میں اپنی زندگی میں ہمیشہ یاد رکھتا ہوں۔گنگولی کے مطابق عمران خان نے کہاجب آپ اونچا اڑیں اور آپ کو گہرے بادل نظر آئیں تو آپ کو مزید اونچا اڑنے کے لیے راستہ مل جاتا ہے۔گنگولی نے بتایامیں نے ان الفاظ کو اس مشکل وقت میں یاد رکھا۔بعدازاں گنگولی فارم میں واپس آئے اور جوہانسبرگ میں جنوبی افریقہ سے کھیلے گئے ٹیسٹ میچ کے دوران انہوں نے ناقابل شکست نصف سنچری بنائی، جس کے بعد ون ڈے میچز میں بھی ان کی شاندار واپسی ہوئی اور انہوں نے ناگ پور میں ویسٹ انڈیز کے خلاف 98 رنز بنائے۔

ڈیلی پاکستان کا یو ٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کے لیے یہاں کلک کریں

مزید : کھیل