’صحت مند رہنے کے لئے مردوں کو ہفتے میں کم از کم 2 مرتبہ یہ کام کرنا چاہیے‘ جدید تحقیق میں سائنسدانوں نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر پاکستانی بیگمات کے ہوش اُڑجائیں گے کیونکہ۔۔۔

’صحت مند رہنے کے لئے مردوں کو ہفتے میں کم از کم 2 مرتبہ یہ کام کرنا چاہیے‘ ...
’صحت مند رہنے کے لئے مردوں کو ہفتے میں کم از کم 2 مرتبہ یہ کام کرنا چاہیے‘ جدید تحقیق میں سائنسدانوں نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر پاکستانی بیگمات کے ہوش اُڑجائیں گے کیونکہ۔۔۔

  

لندن (نیوز ڈیسک) بیویاں پہلے ہی اس بات پر سٹپٹائی رہتی ہیں کہ شوہر حضرات گھر پر ٹک کر نہیں بیٹھتے، اوپر سے سائنسدانوں نے مردوں کو ایک ایسا مشورہ دے ڈالاہے کہ جان کر ہر بیوی کاپارہ چڑھ جائے گا۔ برطانیہ کی آکسفورڈ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے ایک حالیہ تحقیق کے بعد مردوں کو صحت مند رہنے کا ایک نیا طریقہ بتایا ہے، لیکن دوسرے لفظوں میں یہ مردوں کے لئے آوارہ گردی کا سرٹیفکیٹ ہے۔

جن لوگوں کو بہت زیادہ غصہ آتا ہے عموماً وہ کتنے سال کی عمر میں مر جاتے ہیں، سائنسدانوں کا جواب جان کر آپ کبھی غلطی سے بھی غصہ نہ کریں گے

میل آن لائن کے مطابق پروفیسر رابن ڈن بار نامی سائنسدان کا کہنا ہے کہ صحتمند اور خوشگوار ازدواجی زندگی کے لئے مردوں کو چاہیے کہ ہفتے میں کم از کم دو بار اپنے دوستوں کے ساتھ محفل ضرورکیا کریں۔ وہ کہتے ہیں کہ اگر مرد اپنے دوستوں سے باقاعدگی سے ملاقات کرتے رہیں تو ان کے جسم میں مدافعت کا نظام مضبوط ہوجاتا ہے، مزاج کو خوشگوار کرنے والے اینڈورفن ہارمون کا لیول بڑھ جاتا ہے اور ذہنی پریشانی کی سطح کم ہوجاتی ہے۔ پروفیسر ڈن بار کے مطابق اگر مرد اکٹھے ہوکر کوئی کھیل کود کریں،جس میں انہیں ٹیم بنا کر ایک دوسرے سے مقابلہ کرنا ہو، تو یہ ان کے لئے اور بھی بہتر ہے۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

تحقیق میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ تقریباً ایک تہائی مرد اپنے لئے اتنی فرصت بھی نہیں نکال پاتے کہ ہفتے میں ایک بار ہی اپنے دوستوں سے میل جول کرسکیں۔ تحقیق میں شامل 40 فیصد کا کہنا تھا کہ وہ ہفتے میں زیادہ سے زیادہ ایک بار ہی اپنے دوستوں سے مل پاتے ہیں۔ اب یہ تو معلوم نہیں کہ ان مردوں کا یہ بیان کس حد تک درست ہے، کیونکہ اس تحقیق میں ان کی بیویوں سے معلومات نہیں لی گئی تھیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس