نوجوان لڑکی کو گھر کے قریب دوسرے قبیلے کے لڑکے کیساتھ ایسا کام کرتے کزن نے دیکھ لیا کہ فوری موت کے گھاٹ اتار دیا، لڑکے کے قتل کا حکم لیکن ایسا کیا کررہے تھے؟ جان کر کوئی بھی گھبرا جائے

نوجوان لڑکی کو گھر کے قریب دوسرے قبیلے کے لڑکے کیساتھ ایسا کام کرتے کزن نے ...
نوجوان لڑکی کو گھر کے قریب دوسرے قبیلے کے لڑکے کیساتھ ایسا کام کرتے کزن نے دیکھ لیا کہ فوری موت کے گھاٹ اتار دیا، لڑکے کے قتل کا حکم لیکن ایسا کیا کررہے تھے؟ جان کر کوئی بھی گھبرا جائے

  

فورٹ منرو(ویب ڈیسک )تمن لغاری کے علاقہ تھوخ میں کالی قرار دیکر لڑکی کے قتل کے بعد پنچایت نے لڑکے کے قتل کا بھی حکم جاری کردیا ،کالا قرار دیا جانے والا لڑکا جان بچانے کے لئے روپوش ہوگیا ۔

روزنامہ دنیا کے مطابق قبائلی علاقوں میں اکیسویں صدی میں بھی فرسودہ روایات کا راج قائم ہے ،بی ایم پی تھانہ تھوخ کے علاقہ میں خالق داد مانکانی نے اپنی کزن (س )کو مبینہ طور پر دوسرے قبیلہ کے ہارون نامی لڑکے سے گھر کے قریب باتیں کرتے ہوئے دیکھ کر فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا جبکہ لڑکا بچ نکلنے میں کامیاب ہو گیا تھا ، لڑکی کو بغیر پوسٹ مارٹم کے دفنا دیا گیا ۔

اخباری ذرائع کے مطابق قاتل خالق داد نے اپنی برادری کی پنچایت لگائی جس میں مبینہ کالا ہارون کو دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم سناد یا گیا ، دوسری طرف مبینہ کالا ہارون قتل ہونے کے خوف سے روپوش ہو گیا ، مذکورہ واقعہ کی وجہ سے دونوں قبائل کے درمیان حالات کشیدہ ہو چکے ہیں جبکہ قتل کی خبر شائع ہونے پر رسالدار بی ایم پی خرم عباس نے نوٹس لیتے ہوئے سرکل افسر بی ایم پی اور ایس ایچ او تھانہ تھوخ کو فوری رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

مزید : جرم و انصاف