لڈن: بڑی چوری کا مرکزی ملزم گرفتار‘ تحقیقات کا دائرہ وسیع 

لڈن: بڑی چوری کا مرکزی ملزم گرفتار‘ تحقیقات کا دائرہ وسیع 

  



 لڈن (نامہ نگار) لڈن کی تاریخ کی سب سے بڑی چوری کی واردات  کا ملزم پکڑا گیا، اچھودولتانہ نامی شخص نے میاں ایاز خان دولتانہ کے گھر سے 160تولہ زیورات طلائی اپنے دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر چوری کیے تھے، ملزم کے قبضہ سے چوری شدہ سونا میں سے کچھ برآمد کر لیا۔تفصیلات کے مطابق لڈن کی تاریخ کی سب سے بڑی چوری چند ماہ قبل میاں ایاز خان دولتانہ کے گھر ہوئی تھی جس میں 160تولہ زیورات طلائی چوری ہو گئے تھے جس پر پولیس نے تفتیش جاری رکھی اور ظہواں مائی نامی(بقیہ نمبر51صفحہ12پر)

 خاتون کو شبہ پر گرفتار کیا گیا جس پر پولیس کے مبینہ تشدد پر ڈی ایس پی صدر راؤ طارق پرویز، ایس ایچ او تھانہ لڈن سید عارف حسین شاہ، اے ایس آئی حاجی یونس، ٹء ایس طاہر چوہان سمیت کئی اہلکاروں پر جھوٹے مقدمات ہوئے اور کئی اہلکار جیل بھی گئے۔ اور مدعی ایاز دولتانہ پر بھی ظہوراں مائی وغیرہ نے جھوٹا مقدمہ درج کروا کر ان کی فیملی کو ذہنی طور پر ٹارچر کیا، لیکن ڈی پی او وہاڑی اختر فاروق اور ڈی ایس پی صدر خالد جاوید جوئیہ نے ایک ٹیم تشکیل دی جنہوں نے مرکزی ملزم اچھو دولتانہ جو کہ میاں ایاز دولتانہ کا قریبی رشتہ دار ہے کو گرفتار کر لیا ہے اوراس کے چار دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے پولیس ٹیمیں مسلسل چھاپے مار رہی ہیں۔ پولیس نے چوری کیے گئے سونے میں کچھ برآمد بھی کر لیا ہے۔ عوام نے پولیس کو اس اندھے کیس کو سلجھانے اور چوروں کو ٹریس کرنے پر خراج تحسین پیش کیا ہے۔ عوام الناس کا کہنا ہے کہ اچھو دولتانہ اور اس کے ساتھیوں کو عبرت کا نشان بنایا جائے جنہوں نے مدعی اور پولیس ملازمین پر جھوٹے مقدمات درج کروائے 

وسیع 

مزید : ملتان صفحہ آخر