لڈن: بزرگ خاتون تیزاب سے  متاثرہ دو یتیم نواسوں کیلئے مسیحا کی منتظر

      لڈن: بزرگ خاتون تیزاب سے  متاثرہ دو یتیم نواسوں کیلئے مسیحا کی منتظر

  



وہاڑی(بیورورپورٹ+نمائندہ خصوصی)نواحی علاقہ لڈن کی رہائشی نانی اپنے دو معصوم تیزاب زدہ اور یتیم نواسوں سمیت کسی مسیحا کی منتظرہے تین ماہ قبل معمولی رنجش پر شوہر نے رات کو سوتے بچوں اور بیوی پر تیزاب پھینک دیا تھا جس سے بیوی سلمیٰ جانبحق ہوگئی اور بچے موت و حیات کی کشمکش میں (بقیہ نمبر42صفحہ12پر)

 مبتلا  واقعات کے مطابق نواحی علاقہ لڈن میں تین ماہ قبل سوتیلے باپ نے معمولی رنجش پر بیوی اور دو معصوم بچوں پرتیزاب پھینک دیا تھا جس سے سلمیٰ اکیس دن زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہی اور آخر کار چل بسی لیکن معصوم بچے ابھی تک موت و حیات میں مبتلا زندگی گزارنے پر مجبور ہیں  بشیراں بی بی اپنے دو معصوم تیزاب زدہ اور یتیمنواسوں سمیت روتے ہوئے بتایاکہ ایک سال قبل میں نے اپنی بیٹی سلمیٰ کی دوسری شادی عباس نامی آدمی سے کی پہلی شادی سے سلمیٰ کے دو   بچے سات سالہ کرن اور تین سالہ ریحان ہیں تین ماہ قبل معمولی گھریلو رنجش پر عباس نے رات کو سوتے ہوئے بیوی بچوں پر تیزاب پھینک دیا جس سے تینوں افراد بری طرح جھلس گئے بعداز اں  عباس  فرار ہوگیا متاثرین کے شور مچانے پر اہل محلہ ریسکیو کے زریعے انہیں ہسپتال پہنچایا جہاں اکیس دن موت و حیات کی کشمش کے بعد سلمیٰ زندگی کی بازی ہار گئی اور معصوموں کو ممتا کی شفقت سے محروم کر گئی پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے ملزمان عباس اور اسکے ساتھی کو گرفتار کرکے پابند سلاسل کردیا لیکن دونوں معصوموں کا زندہ رہنا مشکل ہوگیا ہے نانی بشیراں بی نی کا کہنا ہے کہ وہ بہت غریب لوگ ہیں ان کے پاس جو جمع پونجی تھی وہ خرچ کر چکے ہیں اب دو وقت کا کھانا بھی میسر نہیں اب وہ کسی مسیحا کے منتظر ہیں بشیراں بی بی نے مخیر حضرات سمیت وزیراعلیٰ پنجاب اور وزیراعظم پاکستان سے امداد کی اپیل کی ہے

منتظر 

مزید : ملتان صفحہ آخر