لاہو رہائی کورٹ‘ کلکٹر اشتمال ملک ناصر محمود اعوان  سپرنٹنڈنٹ سعید خان کیخلاف سنگل بنچ کا حکم معطل 

لاہو رہائی کورٹ‘ کلکٹر اشتمال ملک ناصر محمود اعوان  سپرنٹنڈنٹ سعید خان ...

  



مظفر گڑھ(نامہ نگار)لاہور ہائی کورٹ ملتان کے ڈبل بنچ نے کوٹ اددو کے سابق سٹی ناظم چوہدری عارف ندیم کی جانب سے سنگل بنچ میں دائر کی گئی کلکٹر اشتمال ملک ناصر محمود اعوان اور سپرینڈنٹ سعید خان چانڈیہ کیخلاف رٹ پٹیشن پر سنگل(بقیہ نمبر20صفحہ12پر)

 بنچ کی جانب سے دونوں افسران بارے تحقیقات کیئے جانے کے مبینہ ڈا ئریکشن کے حکم کو معطل کر دیا،قبل ازیں عارف ندیم نے اپنی رٹ پٹیشن میں موقف اختیار کیا تھاکہ اس کی موضع پرہاڑ شرقی میں واقع اراضی کی حد براری  کے لیئے دی جانوالی درخواستوں پر کلکٹر اشتمال،سپر ینڈنٹ عملدارآمد نہیں کر رہے،جس پر ہائی کورٹ کے ڈبل بنچ میں کلکٹر اشتمال نے رٹ دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ چونکہ موضع پرہاڑ شرقی زیر اشتمال ہے اسلیئے زیر اشتمال موضع میں تقسیم اراضی،حد براری کا اختیار سول کورٹ کو حاصل ہے کھاتہ نمبر663 کا ونڈہ جات بھی تجویز نہ ہوا ہے اور عارف ندیم کی جانب سے مورخہ23-8-2019 کو دی جانیولی درخواستوں کو بھی سول کورٹ سے رجوع کر نے کا کہہ کر داخل دفتر کر دیا گیا اور یہ ساری عدالتی کاروائی کی گئی،جبکہ عارف ندیم بضد ہے کہ اسے پرہاڑ شرقی کو وہ حصہ جوکہ اندرون شہر کوٹ اددو کی حدود میں آتا ہے کی محکمہ اشتمال حد براری کر کے دے عدالت کو تمام عدالتی کاروائی ریکارڈ بھی پیش کیا گیا جس پر ہائی کورٹ ملتان کے ڈبل بنچ  نے سنگل بنچ کی جانب سے ڈائریکشن کے حکم کو معطل کر دیا،بعدا زاں کلکٹر اشتمال ملک ناصراعوان نے نمائندے سے گفتگو کرتے کرتے ہو ئے کہا میں نے پوری سروس انتہائی ایماندادری سے کی ہے اور اسی موضع پرہاڑ شرقی میں پچاس ہزار کنال اراضی کے بوگس انتقا لات کو خارج کیا ہے،اگر کوئی بلیک میلر قبضہ مافیا سرغنہ یہ سمجھتا ہے کہ عدالتی پیچیدگیوں یا جھوٹی پروپیگنڈہ مہم سے اپنے ناجائز مذموم مقاصد مجھ سے حاصل کر سکتا ہے تو یہ ناممکن ہے انہوں نے بتایا کہ انہوں نے عدالت میں عارف ندیم کی جانب سے سپرینڈنٹ کو بلیک کرنے کی خاطر کیئے گئے موبائل میسجز اور کردار کشی پر مبنی اخباری تراشہ جات بھی پیش کیئے ہیں انہوں نے کہا کہ جب تک مظفر گڑھ میں تعنیات ہوں حق اور انصا ف کرونگا۔

معطل 

مزید : ملتان صفحہ آخر