مہمند ڈیم کیخلاف جھوٹی شکایت، کارروائی کیلئے واپڈا کی متفرق درخواست دائر

مہمند ڈیم کیخلاف جھوٹی شکایت، کارروائی کیلئے واپڈا کی متفرق درخواست دائر

  



اسلام آباد(خصوصی رپورٹ)واپڈا نے مہمند ڈیم کی تعمیر کیلئے مشاورتی خدمات کا ٹھیکہ دینے سے متعلق نیب کو بھجوائی جانے والی جھوٹی در خواست اور لاہور ہائی کورٹ میں دائر جھوٹی اور بے بنیاد رٹ پٹیشن کیخلاف سپریم کورٹ میں متفرق درخواست دائر کر دی۔ محکمہ تعلقات عامہ پاکستان واپڈا کے ہینڈ آؤٹ کے مطابق متفرق درخواست میں عدالت عظمیٰ سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ تحقیقاتی اداروں کو اِس بات کا حکم دے کہ وہ اِن جھوٹی درخواستوں کے پسِ پردہ عناصر کو بے نقاب کریں،جو منصوبے کی تعمیر کیخلاف عدالتوں، نیب اور عملدرآمد کرنے والے اداروں کو غیر ضروری طور پر ملوث کرنا چاہتے ہیں۔ مہمند ڈیم پراجیکٹ کے لئے مشاورتی خدمات کا کنٹریکٹ ایوارڈ کرنے کیخلاف محبوب الہٰی کے نام سے 21مئی 2019 ء کو نیب کو ایک شکایت ارسال کی گئی، جس میں استدعا کی گئی کہ قوانین کے برخلاف مذکورہ کنٹریکٹ ایوارڈکرنے پر نیب واپڈا کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے۔ ساتھ ہی 25 مئی 2019 ء کو لاہور ہائی کورٹ میں بھی مذکورہ کنٹریکٹ ایوارڈ کرنے کے خلاف حکم امتناعی جاری کرنے کے لئے رٹ پٹیشن دائر کر دی گئی۔اِس رٹ پٹیشن کو دائر کرنے کے لئے بھی محبوب الہٰی کا نام اور شناخت استعمال کی گئی۔نیب نے ملتان میں پولیس کے ذریعے شکایت کنندہ یعنی محبوب الہٰی سکنہ چوٹی زیریں ضلع ڈیرہ غازی خان کو بھی طلب کیا۔ محبوب الہٰی نے بتایا کہ نہ تو اِس نے نیب کو کوئی شکایات بھجوائی ہے اور نہ ہی لاہور ہائی کورٹ میں رٹ پٹیشن دائر کی ہے اْس کامذکورہ شکایت یا رٹ پٹیشن سے کوئی سرو کار نہیں۔یہ بات واضح ہے کہ اگر وہ خود نہیں توکوئی اور اِس کا نام استعمال کرتے ہوئے مہمند ڈیم کی بروقت تعمیر کی راہ میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کر رہاہے۔متفرق درخواست میں اِس بات کی بھی نشاندہی کی گئی ہے کہ اِس طرح کے ہتھکنڈے فور تھ جنریشن وار فیئر کا حصہ ہیں تاکہ قومی اہمیت کے حامل ایسے منصوبے پایہء تکمیل تک نہ پہنچ سکیں۔

واپڈا،درخواست

مزید : پشاورصفحہ آخر