ماحولیاتی منظوری نہ ہونے پر کثیر المنزلہ عمارت کی تعمیر روکنے کا حکم

  ماحولیاتی منظوری نہ ہونے پر کثیر المنزلہ عمارت کی تعمیر روکنے کا حکم

  



کراچی(آئی این پی)ادارہ تحفظ ماحولیات حکومت سندھ نے باتھ آئی لینڈ کلفٹن میں ماحولیاتی اجازت لیے بغیر زیر تعمیر کثیر المنزلہ عمارت کی تعمیر روکنے کے احکامات جاری کردئیے۔واضح رہے کہ وزیر اعلی سندھ کے مشیر برائے قانون, ماحولیات، موسمیاتی تبدیلی اور ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب کی ای پی اے سندھ کو ہدایات ہیں صوبے میں کسی قسم کی ماحولیاتی خلاف ورزی کرنیوالوں کے سے کوئی رعایت نہ برتی جائے۔تفصیلات کے مطابق شہر کی زیر تعمیر عمارتوں کی معمول کی ماحولیاتی نگرانی کے دوران آشکار ہوا کہ مذکورہ عمارت کی ماحولیاتی اجازت حاصل نہیں کی گئی ہے جو سندھ کے قانون برائے تحفظ ماحولیات 2014کی دفعہ 17 کی صریح خلاف ورزی ہے۔مذکورہ دفعہ کے تحت سندھ میں کسی قسم کے ترقیاتی منصوبے کی تعمیر یا شروعات ادارہ تحفظ ماحول سندھ سے ماحولیاتی اجازت کے بغیر شروع نہیں کی جاسکتی۔بعد ازیں سندھ ای پی اے نے مذکورہ بلڈنگ تعمیر کرنے والی کمپنی ایم آر کے بلڈرز اینڈ ڈولپرز کو ایک ماہ کے اندد ماحولیاتی اجازت حاصل کرنے کی تحریری ہدایات جاری کیں۔تاہم ایک ماہ گزرنے کے باوجود بلڈر کی جانب سے ماحولیاتی اجازت کی درخواست دائر نہ کرنے پر ڈائریکٹر جنرل سندھ ای پی اے نے سندھ کے قانون برائے تحفظ ماحول 2014 کی دفعہ 21 کی روشنی میں بلڈر کو تحریری طور پر اس وقت تک تعمیری سرگرمیاں روکنے کے تحریری احکامات دے دئیے ہیں جب تک کہ تعمیر کے لیے ماحولیاتی اجازت حاصل نہیں کرلی جاتی۔بلڈر کو یہ بھی آگاہ کردیا گیا ہے کہ تعمیر نہ روکنے کی صورت میں اس کے خلاف مذکورہ قانون کے تحت متعلقہ عدالت میں مقدمہ دائر کیا جائے گا۔

سندھ حکم

مزید : علاقائی