دسمبر حکومت کا آخری مہینہ،پانام لیکس عالمی سازش،سیاسی قیادت کیخلاف استعمال کی گئی:مولانا فضل الرحمٰن

دسمبر حکومت کا آخری مہینہ،پانام لیکس عالمی سازش،سیاسی قیادت کیخلاف استعمال ...

  



کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمن نے دسمبر تک حکومت کے خاتمے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم نے اقتدار پر قابض مافیا سے جان چھڑانی ہے۔ حکمران اقتدار چھوڑیں اور یورپ میں جا کرعیاشیاں کریں۔کوئٹہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ دھرنا تاریخی ایونٹ تھا، جو حالات پر اثر انداز ہوا۔ ہمارے حلیف ان حالات سے اگر فائدہ اٹھاتے ہیں تو اچھی بات ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک تنزلی کی طرف جا رہا ہے اور بحران میں اضافہ ہوا۔ حکومت کیخلاف ہمارے مظاہرے پورے ملک میں جاری ہیں۔ ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے دعویٰ کیا کہ پاناما بین الاقوامی دباؤ تھا جسے سیاسی قیادت کے خلاف استعمال کیا گیا۔ امریکی بیان سے واضح ہو گیا پاناما ایک سازش تھی۔ موجودہ حکومت کو ایجنٹ بنا کر بھیجا گیا تا کہ سی پیک میں بگاڑ پیدا کرے۔ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ میثاق جمہوریت ایک سنجیدہ ڈاکیومنٹس ہے۔ حکومت اس قابل نہیں کہ ان کے ساتھ کوئی میثاق کیا جائے۔ میثاق جمہوریت کو بہتر لوگ ہی بہتر بنا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی واپسی کا دارومدار صحت پر منحصر ہے۔دوسری طرف مولانا فضل الرحمان دو روزہ دورے پر کوئٹہ پہنچ گئے جمعیت علماء اسلام کے صوبائی امیر پارلیمانی وفد اور پارٹی کارکنوں نے ان کاا ستقبال کیا آج پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے زیر اہتما م جلسہ عام میں شرکت کرینگے۔

مولانافضل الرحمن 

مزید : صفحہ اول