نادار اور غریب بچوں کو مفت تعلیم دینے کا پروگرام مکمل طور پرناکام

نادار اور غریب بچوں کو مفت تعلیم دینے کا پروگرام مکمل طور پرناکام

  



  رستم (تحصیل رپورٹر) ایلیمنٹری ایجوکیشن فاونڈیشن کے زیر انتظام نادار اور غریب بچوں کو مفت تعلیم دینے کا پروگرام مکمل طور پر فیل ہوچکا ہے،  انیس مہینوں سے بقایاجات سے بچوں کا مستقبل تاریک ہونے کا اندیشہ ہے، معاہدہ کرنے والے نجی تعلیمی اداروں نے طلباء کو فارغ کرنے کی دھمکی دیدی۔تحصیل رستم کے ایک نجی تعلیمی ادارے کے پرنسپل نے روزنامہ (پاکستان)کو بتایا کہ اپریل 2018 سے نومبر 2019 تک صوبائی حکومت نے چار سو کے قریب بچوں کو ایلیمنٹری ایجوکیشن فاونڈیشن پروگرام کے تحت داخل کرائیں اس ضمن میں سکول کی جانب سے ان بچوں کو کتابیں، یونیفارم اور شوز وقتا فوقتا دئیے جاتے ہیں لیکن انیس مہینوں سے ان طلباء کی پیمنٹ بقایا ہیں اس سلسلے درخواستوں کے علاوہ وزیراعلی، مشیر تعلیم اور سیکرٹری ایجوکیشن کے ساتھ ملاقاتیں بھی کئے لیکن یقین دہانی کے علاوہ کچھ نہیں ملا ہم حکومتی شخصیات کیساتھ ملاقاتیں کرتے کرتے تھک گئے ہیں اگر 15 دسمبر تک ہمیں رقم نہیں دی گئی تو ان بچوں کا مستقبل تاریک ہوجائے گا سکول میں شوز اور سویٹرز کی بنا یونیفارم نا مکمل ہے اس لئے زیادہ تر بچے سکول چھوڑیں گے اس کے علاوہ ان بچوں کو پڑھانے والے ٹیچرز کی سیلری کا بھی سنگین مسلہ ہے انہوں نے واضح کیا کہ صوبے میں اس پروگرام کے تحت تقریبا 91 ہزار بچے 1030 نجی تعلیمی اداروں میں زیر تعلیم ہیں جن کے ساتھ حکومت نے تحریری معاہدہ بھی کیا ہے۔۔۔

مزید : صفحہ اول