میانی صاحب قبرستان اراضی سے متعلق کیس کی سماعت ،عدالت کا حکم امتناعی کے باوجودشہری شاہدحسین کے گھر کو سیل کرنے کانوٹس ،فوری ڈی سیل کرنے کا حکم

میانی صاحب قبرستان اراضی سے متعلق کیس کی سماعت ،عدالت کا حکم امتناعی کے ...
میانی صاحب قبرستان اراضی سے متعلق کیس کی سماعت ،عدالت کا حکم امتناعی کے باوجودشہری شاہدحسین کے گھر کو سیل کرنے کانوٹس ،فوری ڈی سیل کرنے کا حکم

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہورہائیکورٹ نے میانی صاحب قبرستان اراضی سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران حکم امتناعی کے باوجودشہری شاہدحسین کے گھر کو سیل کرنے کانوٹس لے لیا،عدالت نے میانی صاحب کمیٹی کے قانونی مشیرحافظ خلیل کی سرزنش کردی،عدالت نے شہری کے گھر کو فوری ڈی سیل کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہورہائیکورٹ میں میانی صاحب قبرستان اراضی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،جسٹس امیربھٹی کی سربراہی میں فل بنچ نے درخواستوں پر سماعت کی،بنچ نے حکم امتناعی کے باوجودشہری شاہدحسین کے گھر کو سیل کرنے کانوٹس لے لیا،عدالت نے میانی صاحب کمیٹی کے قانونی مشیرحافظ خلیل کی سرزنش کردی،بنچ نے قانونی مشیرکی درخواست پر ایک سال سے جواب جمع نہ کروانے پراظہار برہمی کیا،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ یہ آپ کی قابلیت ہے ایک سال میں آپ جواب جمع نہیں کروا سکے،عدالت نے شہری کے گھر کو فوری ڈی سیل کرنے کا حکم دے دیا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور