ٹی وی پروگرام میں ماڈل کو اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی ویڈیو دیکھنے پر مجبور کردیا گیا، ہنگامہ برپاہوگیا

ٹی وی پروگرام میں ماڈل کو اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی ویڈیو دیکھنے پر مجبور ...
ٹی وی پروگرام میں ماڈل کو اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی ویڈیو دیکھنے پر مجبور کردیا گیا، ہنگامہ برپاہوگیا

  



میڈرڈ(مانیٹرنگ ڈیسک) سپین میں ایک رئیلٹی ٹی وی شو میں شریک لڑکی کو اسی کے ساتھ ہونے والی جنسی زیادتی کی ویڈیو دیکھنے پر مجبور کر دیا گیا جس پر پورے ملک میں ہنگامہ برپا ہو گیا ہے اور کمپنیوں نے اعلان کر دیا ہے کہ وہ اس شو کو اشتہارات نہیں دیں گے۔ ٹیلیگراف کے مطابق کارلوٹا پریڈو نامی اس لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی بھی اسی شو کے دوران ہی ہوئی تھی۔ شو کے دوران ایک موقع پر وہ کثرت شراب نوشی کی وجہ سے نیم بے ہوش ہو گئی تھی کہ اس دوران شو میں شریک ایک مرد نے اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

رپورٹ کے مطابق شو کی گزشتہ قسط میں کارلوٹا کو ڈائری روم میں بھیجا گیا اور کہا گیا کہ شو کے ایک امیدوار مرد نے ایک لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔ تم ڈائری روم میں جاﺅ اور جنسی زیادتی کی وہ ویڈیو دیکھو۔ اس وقت تک کارلوٹا کو کوئی اندازہ نہیں تھا کہ اس کے ساتھ جنسی زیادتی ہو چکی ہے اور خود اپنی ہی ویڈیو دیکھنے کے لیے اسے ڈائری روم بھیجا جا رہا ہے۔ جب وہ ڈائری روم میں گئی اور ویڈیو چلنی شروع ہوئی تو اس کے پیروں تلے زمین نکل گئی۔ کارلوٹا کے ساتھ جنسی زیادتی کی یہ ویڈیو شو میں نشر نہیں ہوئی تاہم لیک ہو کر سپین کے میڈیا تک چلی گئی اور معاملہ منظرعام پر آ گیا۔ رپورٹ کے مطابق کارلوٹا کو جس لوپیز نامی شخص نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا اس کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس