پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اِن کیمرہ اجلاس کب ہو گا ؟تفصیلات آ گئیں

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اِن کیمرہ اجلاس کب ہو گا ؟تفصیلات آ گئیں
پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اِن کیمرہ اجلاس کب ہو گا ؟تفصیلات آ گئیں

  



اسلام آباد(صباح نیوز) پارلیمانی پبلک اکائونٹس کمیٹی کا اجلاس  کل (منگل کے روز) پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگا،نو منتخب چیئرمین رانا تنویر حسین کی صدارت میں پہلا اجلاس ہی ان کیمرہ  ہوگا، مجموعی طورپر موجودہ  پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا یہ  دسواں اجلاس ہوگا، پی اے سی کی عدم فعالیت کے باعث تاحال نئی آڈٹ رپورٹ کے تحت سالانہ سرکاری حسابات کی جانچ پڑتال شروع نہیں ہوسکی جبکہ اس رپورٹ میں وسیع پیمانے پر آڈٹ اعتراضات شامل ہیں جس میں کھربوں روپے کی بے قاعدگیوں اور بے ضابطگیوں کی نشاندہی کی گئی ہے ،پی اے سی پر18ہزار سے   زائد آڈٹ اعتراضات کا بوجھ ہے اور اس حوالے سے تاحال کوئی پیشرفت نہیں ہو سکی ہے۔

مسلم لیگ ن کے حالیہ ادوار کے سالانہ حسابات کی جانچ پڑتال پاکستان تحریک انصاف سے تعلق رکھنے والے  کنوینئرز سب کمیٹیز کی سربراہی میں ہوگی اس حوالے سے کل لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔  پی اے  سی سیکرٹریٹ سے  کمیٹی کی مجموعی کارکردگی پر بریفنگ طلب کرلی گئی  ہے۔ حکام سے کہا گیا ہے کہ تمام ریکارڈ کل کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔اجلاس میں سالانہ حسابات کی جانچ پڑتال کاشیڈول اورورک پلان بھی طےکیاجائےگاجبکہ کمیٹی کی کارروائی کو موثر بنانے، اختیارات میں اضافے  کا جائزہ لیا جائے گا۔

یاد رہے کہ پی اے سی کے انتخابی  حالیہ اجلاس میں حکومت اپوزیشن کے ارکان کمیٹی کے اختیارات میں اضافے اور بیورو کریسی کو جواب دہ بنانے کیلئے مختلف تجاویز پیش کرچکے ہیں جس میں محکمانہ  آڈٹ کمیٹیوں کے اجلاس نہ ہونے  ، بے قاعدگیوں میں ملوث  ذمہ داران کا تعین نہ کرنے  کے حوالے سے  افسران کی اے سی آر میں اس کے اندراج، افسران کی تنزلی کرنے اور اہم عہدوں پر فائز نہ کرنے  کی تجاویز اور کمیٹی کے فیصلوں پر عملدرآمد کیلئے  عدالتی  اختیار کے مساوی اختیار دینے کی تجاویز شامل ہیں،جس کے تحت توہین عدالت کی طرح پی اے سی کے فیصلوں پر عملدرآمد نہ کرنے  والے افسران پر توہین پارلیمنٹ  تصور ہوگی۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد