وزیراعظم نے سول سرونٹس کارکردگی اور نظم و ضبط قواعد 2020 کی منظوری دیدی

وزیراعظم نے سول سرونٹس کارکردگی اور نظم و ضبط قواعد 2020 کی منظوری دیدی
وزیراعظم نے سول سرونٹس کارکردگی اور نظم و ضبط قواعد 2020 کی منظوری دیدی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم نے سول سرونٹس کارکردگی اور نظم و ضبط قواعد 2020 کی منظوری دیدی،قوانین کامقصد سول سرونٹس کی کارکردگی کو بہتر کرنااور محکمانہ احتساب کے نظام کو شفاف بنانا ہے۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے مطابق محکمانہ احتساب کے عمل کو تیز بنانے کیلئے اتھورائزڈ آفیسر کا درجہ ختم کردیاگیا،مجاز اتھارٹی کی منظوری کے بغیر نچلی سطح پر معمولی سزائیں دیئے جانے کامسئلہ حل ہوگا،نئے قواعدہ میں ہر مرحلے کیلئے ٹائم لائنز مقرر کردی گئیں ،چارجز یا الزامات کا جواب دس سے چودہ روز میں دینا ہوگا۔

انکوائری کمیٹی ،افسر کی جانب سے کارروائی مکمل کرنے کیلئے 60 روز مقررکئے جائیں گے،اتھارٹی کی جانب سے کیس کافیصلہ تیس دنوںمیں کیا جائے گا،پلی بارگین اوروالینٹری ریٹرن کو بدعنوانی”مس کنڈکٹ“ کے زمرے میں شامل کیاگیا،اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کوان قواعد کے حوالے سے ذیلی قواعد،وضاحت کرنے کااختیار دیاگیا،کسی ایسے کیس میں جہاں متعدد افسران پر الزام ہووہاں ایک انکوائری افسر مقرر کیاجائے گا۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -