برطانیہ میں لاک ڈاؤن کا خاتمہ، تھری ٹیئر سسٹم نافذ

برطانیہ میں لاک ڈاؤن کا خاتمہ، تھری ٹیئر سسٹم نافذ
برطانیہ میں لاک ڈاؤن کا خاتمہ، تھری ٹیئر سسٹم نافذ
سورس:   Instagram

  

لیوٹن (اسرار احمد خان)  برطانیہ میں بدھ (2 دسمبر) کی آدھی رات کو قومی لاک ڈاؤن ختم ہونے کے ساتھ ملک بھر میں تھری ٹیئرسسٹم نافذ کردیا گیا۔ یہ تین مختلف پابندیوں کے درجوں پر مشتمل ہے، اس کے مطابق بیڈفورڈ ، لیوٹن ، سنٹرل بیڈس اور ملٹن کینس نئے نافذ نظام کے درجے 2 کے اصولوں کی پابندیوں میں شامل ہیں۔ 

دوسرے درجے کی پابندیوں میں ، پب اور بارز رات گیارہ بجے تک کھلے رہیں گے ،لیکن صرف اس صورت میں کہ وہ ایک ریستوراں کے طور پر کام کریں گے، شراب صرف کھانے کے ساتھ پیش کی جاسکتی ہے اور مختلف گھرانوں کے چھ افراد تک پب اور باغ وغیرہ میں باہر ایک ساتھ بیٹھ سکتے ہیں۔

وزیراعظم برطانیہ بورس جانسن نے اس ہفتے کے پی ایم کیوز میں ممبران پارلیمنٹ کے سوالات کا سامنا کیا ہے۔ ارکان پارلیمنٹ نے انگلینڈ کے لئے نئی سخت کورونا وائرس پابندیوں کی منظوری دے دی ہے لیکن ٹوری کے 55 اراکین پارلیمنٹ نے حکومتی منصوبے کے خلاف ووٹ دیا ہے اور یہ بورس جانسن کی وزارت عظمیٰ میں سب سے بڑی سرکشی ہے۔

دوسری جانب برطانیہ دنیا کا پہلا ملک بن گیا ہے جس نے وسیع پیمانے پر استعمال کے لئے فائزر اور بائیو ٹیک کورونا وائرس ویکسین کی منظوری دی ہے۔

مزید :

برطانیہ -کورونا وائرس -