یوٹیلیٹی سٹورز کو کمرشل مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا انکشاف 

 یوٹیلیٹی سٹورز کو کمرشل مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا انکشاف 
 یوٹیلیٹی سٹورز کو کمرشل مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا انکشاف 
سورس: File Photo

  

 اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے اجلاس میں یوٹیلیٹی سٹورز کو کمرشل مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا انکشاف ہوا ہے، آڈٹ حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ یوٹیلیٹی سٹورز میں 19 ملین کی خورد برد ہوئی۔

رکن قومی اسمبلی رانا تنویر کی زیر صدارت پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں یوٹیلیٹی سٹورز کو کمرشل مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا انکشاف ہوا۔رانا تنویرحسین کا کہنا تھا کہ یوٹیلیٹی سٹورز کو پبلک مقاصد کے لیے استعمال ہونا چاہیئے، یوٹیلیٹی سٹورز پر غیر معیاری اشیا فروخت ہوتی ہیں، غیر معیاری آٹا ملی بھگت سے فروخت کیا جاتا ہے،یوٹیلیٹی سٹورز میں خرد برد بھی ہو رہی ہے۔

رکن کمیٹی نور عالم خان کاکہناتھاکہ غیرمعیاری خریداری میں بورڈ ارکان ملوث ہیں۔رکن کمیٹی خواجہ آصف نے کہا کہ یوٹیلیٹی سٹورز ایک بہت بڑا سکینڈل ہے، بڑے ڈکیت یوٹیلیٹی سٹورز پر قابض ہیں،کوئی حکومت یوٹیلیٹی سٹورز کی نجکاری نہیں چاہتی۔آڈٹ حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ یوٹیلیٹی سٹورز میں 19 ملین کی خرد برد ہوئی، نیب حکام کی جانب سے بتایا گیا کہ 19 میں سے چھ ملین کی ریکوری ہوئی جبکہ خرد برد میں ملوث ایک ملزم کو پانچ سال کی سزا ہوئی۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -