یونیڈو کو ٹیکنالوجی کی منتقلی ، سرکلر اکانومی  اور مالیاتی انتظاما ت کیلئے رکن ممالک کی مدد کرنی چاہئے ، پاکستانی سفیر کا یونیڈو کانفرنس سے خطاب

یونیڈو کو ٹیکنالوجی کی منتقلی ، سرکلر اکانومی  اور مالیاتی انتظاما ت کیلئے ...
یونیڈو کو ٹیکنالوجی کی منتقلی ، سرکلر اکانومی  اور مالیاتی انتظاما ت کیلئے رکن ممالک کی مدد کرنی چاہئے ، پاکستانی سفیر کا یونیڈو کانفرنس سے خطاب

  

ویانا(اکرم باجوہ) پاکستانی سفیر آفتاب احمد کھوکھر نے یونیڈو  کی جنرل کانفرنس کے 19 ویں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یونیڈو کو ٹیکنالوجی کی منتقلی ، سکلر اکانومی  اور مالیاتی انتظاما ت کیلئے رکن ممالک کی مدد کرنی چاہئے ۔

اقوام متحدہ کے صنعتی ترقی کے ادارے یونیڈو کی جنرل کانفرنس کے 19 ویں اجلاس پاکستانی وفد کے سربراہ کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے  آسٹریا میں پاکستانی سفیر آفتاب احمد کھوکھر نے یونیڈو کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ یونیڈو  پاکستان جیسے ترقی پذیر ممالک  کو در پیش مسائل کا ایک امید افزا حل پیش کرتا ہے۔ انہوں نے زور دیاکہ یونیڈو کو  جدید ٹیکنالوجی کی منتقلی ، سرکلر اکانومی کے اصول اور طریقوں کو فروغ دینے کیلئے مناسب اور متوقع مالیاتی انتظامات کیلئے  رکن ممالک کی مدد کرنی چاہئے ۔

آفتاب احمد کھوکھر نے  اس با ت پر زور دیا کہ  یونیڈو کو روزگار کی تخلیق ، غربت کے خاتمے کا عملی حل اور نتیجے پر مبنی پالیسی کے ذریعے عالمی معیشت کی رہنمائی  کرنی چاہئے ۔ موسمیاتی تبدیلی سے متعلق اپنی سرگرمیوں کی کارکردگی اور تاثیر کو بڑھانے کے لیے موسمیاتی حکمت عملی تیار کرے ۔

 انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں انویسٹمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی پروموشن آفس( آئی ٹی پی او )  ، انڈسٹریل انٹیلی جنس اینڈ گورننس یونٹ اور میڈیکل ویسٹ مینجمنٹ پروجیکٹ کے قیام کے لیے یونیڈو سے مسلسل مدد کی درخواست کی۔

قبل ازیں سفیر کھوکھر نے ڈاکٹر گیرڈ مولر کو یونیڈو کے نئے ڈائریکٹر جنرل کے طور پر تقرری پر مبارکباد  پیش کی ،  انہوں نے  عہدے سے سبکدوش ہونے والے ڈائریکٹر جنرل مسٹر ایل آئی یونگ کا بھی شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے گزشتہ آٹھ سالوں سے یونیڈو کو مؤثر طریقے سے چلایا۔

مزید :

بین الاقوامی -