پاکستان میں شعبہ قانون کے استحکام کے لئےیونیورسٹی آف لاء اورنیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں اشتراک

پاکستان میں شعبہ قانون کے استحکام کے لئےیونیورسٹی آف لاء اورنیشنل یونیورسٹی ...
پاکستان میں شعبہ قانون کے استحکام کے لئےیونیورسٹی آف لاء اورنیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں اشتراک

  

لاہور (ویب ڈیسک) یونیورسٹی آف لاء اورنیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں شعبہ قانون میں اشتراک کو وسعت دینے پر باہمی رضامندی کا اظہار کیا۔ڈاکٹر ریاض احمد،ڈائریکٹر کیو اے اینڈ این آئی او،نسٹ نے وفد کا استقبال کیا۔ڈاکٹر عثمان حسن پرو ریکٹر (اکیڈمک)نسٹ اور پروفیسر پیٹر کرسپ،ڈپٹی وائس چانسلر لاء، یونیورسٹی آف لاء نے اس دستاویز پر دستخط کئے۔اس تقریب میں یونیورسٹی آف لاء کے اینڈریز پریز،ڈائریکٹر بزنس سکول،مارک گیرٹ گلوبل ڈائریکٹر آف انٹرنیشنل سٹوڈنٹ ریکروٹمنٹ،سٹیفن کارلیٹن ڈائریکٹر سٹوڈنٹ ریکروٹمنٹ،گلوبل یونیورسٹی سسٹمز،کیلون جونز ڈائریکٹر انٹرنیشنل گلوبل یونیورسٹی سسٹمز فیصل عظیم،مینجنگ ڈائریکٹر،پاکستان گلوبل یونیورسٹی سسٹمز،صباحت خان چیف آپریٹنگ آفیسر پاکستان گلوبل یونیورسٹی سسٹمز، ڈاکٹر اشفاق حسن خان پرنسپل ایس3ایچ نسٹ، ڈاکٹر نوخیز سرورپرنسپل این بی ایس، ڈاکٹر سلمیٰ صدیقی ڈین ایس3ایچ اور ڈاکٹر محمد آصف خان ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ ایس3ایچ نے شرکت کی۔ 

اس معاہدے کے نتیجے میں دونوں تعلیمی ادارے نیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں قانون کے پڑھائے جانے والے نصاب کو جدید خطوط پر استوار کرنے،قانون کی تعلیم کے لئے عالمی سطح پر رائج معیارات وضع کرنے اور طلباء اور فیکلٹی کے ایکسچینج پروگرامز ترتیب دینے کے لئے باہمی اشترا ک عمل میں لائیں گے۔اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر کرسپ کا کہنا تھا کہ یونیورسٹی آف لاء نسٹ میں قائم کئے جانے والے نئے لاء سکول میں انڈر گریجوایٹ اور پوسٹ گریجوایٹ سطح کے مخصوص پروگرامز میں اپنی شراکت پر پرعزم ہے۔ہمارے لئے یہ قابل فخر لمحہ ہے کہ ہم جدید ترین ٹیکنالوجی کو بروئے کار لا کر قانون کی آن لائن تعلیم کے حوالے سے اپنے تجربات کو بہترین انداز میں بروئے کار لائیں گے۔

ڈاکٹر عثمان حسن پرو ریکٹر (اکیڈمک)نسٹ نے تقریب میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ نامور عالمی اداروں کے ساتھ اشتراک کے ذریعے فیکلٹی اور علوم کا تبادلہ نسٹ کے بنیادی ایجنڈا میں شامل رہا ہے اور اس ضمن میں ہم نے دنیا کی بہترین یونیورسٹیوں سے شراکت داری قائم کی ہے۔انہوں نے کہا کہ قانون کے بہترین تعلیمی ادارے یونیورسٹی آف لاء کے ساتھ اشتراک کرتے ہوئے ہمیں نہایت خوشی محسوس ہو رہی ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -