جج کی گاڑی کیوں روکی ؟موٹر وے پولیس کے 2 سب انسپکٹر معطل

جج کی گاڑی کیوں روکی ؟موٹر وے پولیس کے 2 سب انسپکٹر معطل
جج کی گاڑی کیوں روکی ؟موٹر وے پولیس کے 2 سب انسپکٹر معطل

  

 لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)سیالکوٹ موٹروے پر  انسداد دہشتگردی عدالت کے جج کی گاڑی کو روکنے  پر موٹر وے پولیس کے 2 سب انسپکٹرز کو معطل کر دیا گیاہے۔ 

 نجی ٹی وی چینل "جیو نیوز "کے مطابق سیالکوٹ سے لاہور آتے ہوئے انسداد دہشتگردی عدالت کے جج اعجاز بٹر کو سیالکوٹ موٹروے پر موٹرویز پولیس کی جانب سے  روکا گیا ،دھند کی وجہ سے ٹریفک بند کی گئی تھی تاہم انسداد دہشتگردی عدالت کے جج کا سکواڈ بیرئیر ہٹا کر نکل آیا، جس پر موٹرویز پولیس نے انہیں مرید کے انٹر چینج کے مقام پر روک لیا۔

رپورٹ کے مطابق موٹرویز پولیس کے اس طرز عمل پر اے ٹی سی جج برہم ہوگئے، ان کا کہنا تھا کہ ان کی عدالت آج یہاں ہی لگے گی، ہائی کورٹ بھی یہاں آ کر فیصلہ کرے گی،  کوئی غیرقانونی عمل کیا ہے تو جرمانہ کر دیں۔ واقعے کے حوالے سے ڈی آئی جی موٹرویز پولیس محبوب اسلم کا کہنا ہے کہ جج صاحب کو 40 منٹ تک غلط روکا گیا، 17 کلومیٹر سفر کے بعد انہیں روکنے کا کوئی جواز نہ تھا۔

موٹروے پولیس کا کہنا ہے کہ واقعے میں ملوث 2 سب انسپکٹرز کو معطل کردیا گیا ہے اور انکوائری کا عمل جاری ہے۔

مزید :

قومی -