آئی جی موٹروے مشکوک شہرت والے افسروں کو ہرگز قبول نہ کریں، سابق آئی جی ذوالفقار چیمہ

آئی جی موٹروے مشکوک شہرت والے افسروں کو ہرگز قبول نہ کریں، سابق آئی جی ...
آئی جی موٹروے مشکوک شہرت والے افسروں کو ہرگز قبول نہ کریں، سابق آئی جی ذوالفقار چیمہ

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق انسپکٹر جنرل نیشنل ہائی ویز اینڈ موٹروے پولیس ذوالفقار احمد چیمہ نے کہا ہے کہ  موٹروے پولیس کی نیک نامی ہمارا قومی اثاثہ ہے اس کی ہر قیمت پر حفاظت کی جانی چاہئے۔بلاخوف قانون کی حکمرانی قائم کریں۔

 موٹر وے پولیس کے افسروں سے خطاب کرتے ہوئے ذوالفقار چیمہ نے کہا کہ آئی جی موٹروے کو مشکوک شہرت کے حامل افسروں کو اس نیک نام ادارے میں کسی صورت قبول نہیں کرنا چاہئے،  اس سے اس قابلِ فخر ادارے کی شہرت خراب ہوگی۔ حکومت کو بھی تعیناتی کے وقت اس کا خیال رکھنا چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی تنظیموں نے بھی اس ادارے کو پاکستان کا واحد کرپشن سے پاک ادارہ قرار دیا ہے۔ اس کی نیک نامی کا عالمی سطح پر اعتراف کیا جاتا ہے جو پورے ملک کیلئے فخر کی بات ہے، موٹروے کے افسروں نے یہ نیک نامی اور گُڈوِل اپنی ایمانداری، خوش اخلاقی اور مسافروں کی بے لوث مدد سے حاصل کی ہے۔ یہ تینوں خوبیاں اس کیCore Valuesہیں جنکی ہر قیمت پر حفاظت کی جانی چاہئے۔

انہوں نے بتایا کہ سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری پروٹوکول کے بڑے شوقین تھے۔ ایک بار اِنکے سٹاف افسر نے مجھے فون پر کہاکہ چیف جسٹس صاحب اسلام آباد سے لاہور جارہے ہیں اسلئے موٹروے کی گاڑیاں انکے آگے اور پیچھے ہونی چاہئیں۔ میں نے کہا میں آئی جی ہوں اور میرے ساتھ پروٹوکول کی کوئی گاڑی نہیں ہوتی کیونکہ موٹروے پولیس پر وٹوکول کیلئے نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ "چیف جسٹس آئی جی سے بڑا ہوتا ہے" میں نے کہا " آپ نے درست کہا آئی جی سے تو بڑا ہوتا ہے مگر قانون سے بڑا نہیں ہوتا، موٹروے پر قانون کی خلاف ورزی کرنیوالا جو بھی ہوگا اسکے خلاف کاروائی ہوگی۔ چنانچہ میرے زمانے میں قانون کی خلاف ورزی پر وزیروں، سپریم کورٹ کے ججز، جرنیلوں اور وفاقی سیکریٹریوں کے خلاف کاروائی ہوتی رہی۔ آپ بھی بلاخوف ہائی ویز اور موٹرویز پر قانون کی حکمرانی قائم کریں "۔

انہوں نے کہا کہ "عوام تب مطمئن ہونگے جب ہائی ویز پر لین ڈسپلن قائم ہوگا، بڑی گاڑیاں بائیں لین میں چلیں گی اور قانون کی مکمّل حکمرانی قائم ہوگی"۔ اس سے پہلے آئی جی موٹروے خالد محمود نے اپنے خطاب میں ادارے میں کی گئی اصلاحات پر روشنی ڈالی۔ سابق آئی ذوالفقار چیمہ، آئی جی خالد محمود اور ایڈیشنل آئی جی زبیر ہاشمی نے مل کر پروموٹ ہونے والے افسروں کو رینک لگائے۔

 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -