پنجاب اسمبلی کی تحلیل بارے کھل کر رائے دیں ، عمران خان کا ارکان سے ملاقاتوں کا اعلان 

پنجاب اسمبلی کی تحلیل بارے کھل کر رائے دیں ، عمران خان کا ارکان سے ملاقاتوں ...
پنجاب اسمبلی کی تحلیل بارے کھل کر رائے دیں ، عمران خان کا ارکان سے ملاقاتوں کا اعلان 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان نے پنجاب اسمبلی کی تحلیل کے فیصلے سے متعلق ارکان سے مشاورت طلب کرلی۔ 

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق ایوان وزیر اعلیٰ میں ارکان اسمبلی  نے چیئرمین پی ٹی آئی و سابق وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی ، ملاقات کے دوران  اسمبلی کی تحلیل سے متعلق اپنے تحفظات سے بھی آگاہ کیا ۔  

 عمران خان نے کہا کہ اتوار سے ہر ڈویژن کے ارکان اسمبلی سے مل رہا ہوں، ہم ان لوگوں سے بات کریں گے، اگر یہ بات نہیں کریں گے تو اسمبلیاں تحلیل کر دیں گے، جب تک الیکشن کا اعلان ہو گا میں مکمل فٹ ہوں گا، امپورٹڈ حکومت اسٹیبلشمنٹ کے پیچھے چھپنے کی کوششیں کر رہی ہے، 1970 کے بعد پہلی مرتبہ نظرئیے کی سیاست ہوئی ہے، پہلی مرتبہ لوگوں کو پتا تھا کہ میں نے اسمبلی میں نہیں آنا اسکے باوجود میں 8 حلقوں سے لڑا اور جیتا ہوں، اسمبلیوں کی تحلیل پر میں نے پاکستان کے نامور وکلاء سے بات کی ہے، اگر ایک مرتبہ اسمبلی تحلیل ہو گئی تو یہ لوگ عام انتخابات کو نہیں روک سکتے، میں چاہتا ہوں کہ آپ لوگ کلیر مائنڈ سے الیکشن میں جائیں، یہ نہیں ہونا چاہیے کہ میں نے فیصلہ کیا اور آپ نے مان لیا، آپ کھل کر رائے دیں میرا فیصلہ سمجھ کر جھجھک کا شکار نہ ہوں۔

پی ٹی آئی کے رکن اسمبلی غضنفر چھینہ نے  کہا کہ آپ اس وقت صحتمند نہیں کہ ہر ضلع میں جا سکیں ، اگر کپتان میدان میں نہ ہو تو پھر میچ نہیں جیتا جا سکتا ۔ عمران خان نے جواب دیا کہ جب تک الیکشن کی تاریخ کا اعلان ہو گا میں صحتیاب ہو چکا ہوں گا  پھر انتخابی مہم چلاؤں گا۔

رکن پنجاب اسمبلی ظہیر عباس نے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ  اسمبلی کی تحلیل سے متعلق حلقہ کی سیاست کو مد نظر رکھا جائے ، ہمارا لانگ مارچ انتہائی کامیاب رہا مگر امپورٹڈ حکومت نے اپنے ہر ایم این اے کو ایک ایک ارب روپیہ دیا ہے ۔ عمران خان نے کہا کہ عوام جانتے تھے کہ الیکشن جیتنے کے باوجود میں نے اسمبلی میں نہیں بیٹھنا مگر انہوں نے پھر بھی مجھےووٹ دیا ، یہ اپنے ایم این ایز کو جتنا مرضی فنڈ دے دیں فرق نہیں پڑتا۔

سعدیہ سہیل رانا نے کہا کہ خواتین ارکان اسمبلی کو بھی ملاقات کا موقع دیا جائے ، سیف الدین کھوسہ نے سابق وزیر اعظم سے کہا کہ پنجاب اسمبلی تحلیل ہونے کی صورت میں  یہ بات یقینی بنائی جائے کہ فوری الیکشن ہوگا ، ایسا نہ ہو کہ تاخیری حربے اپنا کر الیکشن میں دیر کی جائے ۔  چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ آپ ارکان اسمبلی مجھے کھل  کر اپنی رائے دیں ۔ 

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -اہم خبریں -