ہم جنس پرست ملازم  جوڑے کو طعنے دینے پر ریسٹورنٹ مالک کوساڑھے 3 کروڑ روپے کے قریب ہرجانہ ادا کرنے کا حکم

ہم جنس پرست ملازم  جوڑے کو طعنے دینے پر ریسٹورنٹ مالک کوساڑھے 3 کروڑ روپے کے ...
ہم جنس پرست ملازم  جوڑے کو طعنے دینے پر ریسٹورنٹ مالک کوساڑھے 3 کروڑ روپے کے قریب ہرجانہ ادا کرنے کا حکم

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایک ریسٹورنٹ کے ہم جنس پرست جوڑے  کو ہراساں کرنے پر ایک لاکھ 24 ہزار 835 پاؤنڈ (تقریباً تین کروڑ 41 لاکھ روپے) کا ہرجانہ دیا گیا ہے۔ اس جوڑے کو ریسٹورنٹ مالک کی جانب سے نہ صرف ہم جنس پرست ہونے کے طعنے دیے جاتے تھے  بلکہ بطور طنز "ویٹرس" بھی کہا جاتا تھا۔

دی ٹائمز کے مطابق  ٹم جیورنک اور ان کے شوہر مارکو سکیٹینا نے ایک ایمپلائمنٹ ٹربیونل کو بتایا کہ لندن کے ایک اطالوی ریسٹورنٹ میں کام کرتے ہوئے ان کی جنسیت پر 'مسلسل بدزبانی' کے ساتھ انہیں مہینوں تک تنگ کیا گیا۔ ایک بار  گندے شیشے کے بارے میں مالک نے کہا کہ اس نے سوچا کہ ہم جنس پرستوں کو یہ زیادہ بہتر طریقے سے صاف کرنا آتا ہوگا۔ ٹم جیورنک کے مطابق جب اس نے مالک کا سامنا کیا تو اس نے آگے سے دھمکی دی کہ اس کا تعلق ایک مافیا فیملی سے ہے اور وہ اسے جان سے بھی مروا سکتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -