استحکام پاکستان پارٹی کا بھی پی ٹی آئی انٹراپارٹی الیکشن کالعدم قراردینے کا مطالبہ

استحکام پاکستان پارٹی کا بھی پی ٹی آئی انٹراپارٹی الیکشن کالعدم قراردینے ...
استحکام پاکستان پارٹی کا بھی پی ٹی آئی انٹراپارٹی الیکشن کالعدم قراردینے کا مطالبہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)استحکام پاکستان پارٹی  نے بھی پی ٹی آئی انٹراپارٹی الیکشن کالعدم قراردینے کا مطالبہ کردیا۔

لاہور سے جاری بیان میں استحکام پاکستان پارٹی کی مرکزی سیکرٹری اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان  کا کہنا ہے کہ مرشد کے شوہر کی جگہ اب بیرسٹر گوہر چیئرمین پی ٹی آئی کے عہدے پر تعینات ہو گئے ہیں،پراسس کے بغیر بطور چیئرمین ان کی تقرری پارٹی کے منشور اور جمہوری روایات کے بر عکس ہے،پی ٹی آئی کے برائے نام انٹرا پارٹی الیکشن ڈکٹیٹر شپ کی بد ترین مثال  ہیں جو نا قابل تسلیم ہیں ،ووٹرز اور متبادل امیدواروں کے بغیر یہ الیکشن جمہوریت کی نفی اور جمہوری اقدار سے انکار ہے ،جمہوریت کا درس دینے والوں نے آج خود ہی پارٹی کے اندر سے جمہوریت کے تاثر کو ختم کر دیا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مذکورہ انتخابات پارٹی کے آئین سے متصادم ہیں جن کی کوئی آئینی و قانونی حیثیت  نہیں ،خواہشات کے تابع الیکشن کے نتائج کسی طرح بھی تسلیم نہیں کئے جا سکتے ،امید ہے الیکشن کمیشن ان انتخابات پر فوری نوٹس لتے ہوئے انہیں کالعدم قرار دے گا۔

فردوس عاشق اعوان نے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن یہ نتائج مسترد کرتے ہوئے پارٹی کے خلاف بھرپور اور مؤثر کارروائی کرے، ان کا مزید کہنا تھا کہ جو جماعت اپنے اندر جمہوری روایات قائم نہیں رکھ سکتی وہ ملک میں کیسے جمہوریت لا سکتی ہے،جمہوریت پسند پارٹی کے طور پر استحکام پاکستان پارٹی ان نتائج کو مسترد کرتی ہے۔

مزید :

قومی -