اوپیک کی خام تیل کی یومیہ رسد میں جنوری کے دوران ایک لاکھ 30ہزار بیرل اضافہ

اوپیک کی خام تیل کی یومیہ رسد میں جنوری کے دوران ایک لاکھ 30ہزار بیرل اضافہ

 لندن (اے پی پی) تیل پیدا کرنے والے ممالک کی تنظیم اوپیک کی خام تیل کی یومیہ رسد میں رواں سال جنوری کے دوران ایک لاکھ 30ہزار بیرل اضافہ ہوا جس کی وجہ انگولا کی برآمدات اور سعودی عرب و دیگر خلیجی ممالک میں تیل کی پیداوار میں اضافہ ہے ۔ ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق اوپیک نے گزشتہ سال نومبر میں ہونے والے اپنے اجلاس کے دوران خام تیل کی پیداوار میں کمی کرنے کی بجائے مارکیٹ شیئر پر زیادہ توجہ مرکوز کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔اوپیک کی رواں سال جنوری کے دوران تیل کی یومیہ رسد اضافے سے 30.37ملین بیرل رہی جو کہ دسمبر 2011ء کے دوران 30.24ملین بیرل یومیہ تھی۔ عالمی سطح پر خام تیل کی قیمتوں میں بڑے پیمانے پر کمی کے باعث اوپیک کو دباؤ کا سامنا ہے تاہم اوپیک نے اپنے اجلاس کے دوران تیل کی پیداوار میں کمی نہ کرنے کا فیصلہ کیا۔ اوپیک کے سیکرٹری جنرل عبداللہ البدری نے لندن میں صحافیوں سے گفتگو کے دوران کہا کہ خام تیل کی قیمتیں اپنی کم ترین سطح تک جا چکی ہیں اور اب تیل کی قیمتوں میں مزید کمی کا امکان نہیں۔ انہوں نے کہا کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں استحکام آ رہا ہے ۔ رپورٹ کے مطابق جنوری کے دوران انگولا کی خام تیل کی یومیہ پیداوار 1.80ملین رہی جبکہ نائیجریامیں بھی خام تیل کی یومیہ پیداوار میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

مزید : کامرس


loading...