غیر کشمیری مقبوضہ کشمیر کے مستقل باشندے نہیں بن سکتے، ظفر اکبر بٹ

غیر کشمیری مقبوضہ کشمیر کے مستقل باشندے نہیں بن سکتے، ظفر اکبر بٹ

سرینگر(اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے رہنما اور جموں و کشمیر سالویشن موومنٹ کے چےئرمین ظفر اکبر بٹ نے غیر کشمیریوں کی علاقے میںآبادکاری کے خلاف جدوجہدجاری رکھنے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ علاقے کی متنازعہ اور خصوصی حیثیت کے پیش نظر غیر کشمیری یہاں کے مستقل باشندے نہیں بن سکتے ۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق سرینگر سے جاری ایک بیان میں ظفر اکبر بٹ نے کہا کہ تقسیم ہند کے وقت بھارت اور پاکستان کی حکومتوں نے مہاجرین کو اپنے اپنے ممالک کی مختلف ریاستوں میں بسایا اور چونکہ کشمیر کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ ہوناابھی باقی ہے ۔

اس لئے ان کو یہاں بسانے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔انہوں نے کہا کہ مقبوضہ علاقے میں تمام مذاہب کے لوگ اس کے خلاف اپنی آواز بلند کررہے ہیں۔حریت رہنمانے کہا کہ کشمیری مہاجرین کی باز آباد کاری کے خلاف نہیں ہیں بلکہ وہ چاہتے ہیں کہ ان کو بھارت کی دیگر ریاستوں میں آباد کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بی جے پی کی طرف سے مقبوضہ علاقے میں مذہبی رواداری کو ختم کرنے کی کوشش ہے اور وہ مذہبی جنون کوہوا دے کر جموں و کشمیر کی مسلم اکثریتی شناخت کو ختم کرنے کی سازشیں کررہی ہے۔

مزید : عالمی منظر