دنیا میں امن کا راستہ آزاد کشمیر سے ہو کر گزرتا ہے،ملی مجلس شرعی

دنیا میں امن کا راستہ آزاد کشمیر سے ہو کر گزرتا ہے،ملی مجلس شرعی

  

لاہور(جنرل رپورٹر ) ملی مجلس شرعی نے کہا ہے کہ دنیا میں امن کا راستہ خود مختار اور آزادکشمیر سے ہو کر گزرتا ہے،کشمیریوں کو وگر ان کا حق خود اردیت نہ دیا گیا تو بھارت بھی امن سے نہیں رہ سکے گا،خطے میں امن کے لئے مسئلہ کشمیر کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا ہوگا، ملی مجس شرعی کے کے زیر اہتمام رواں ماہ کا پہلا عشرہ کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور پر منایا جائے گا، اس دوران ریلیوں اور سیمینارز کا انعقاد کیا جائے گاان خیالات کا اظہار ی مجلس شرعی کے ایک اہم اجلاس سے میں کیا گیا اجلاس میں شریک ملی مجلس شرعی کے کے رہنماؤں صدر مفتی محمد خان قادری، سیکرٹری جنرل ڈاکٹر پروفیسر محمد امین،جماعت اسلامی کے ڈاکٹر فرید احمد پراچہ,علامہ خلیل الرحمن قادری،راغب حسین نعیمی،قاری یعقوب شیخ،حافظ عاکف سعید،جماعت اہلحدیث کے حافظ عبدالوحید شاہد روپڑی،علامہ احمد علی قصوری سمیت دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گستاخ رسول ﷺ کی شرعی سزا موت ہے ۔ اور295Cکی طرح عالمی سطح پر قانون سازی کی ضرورت ہے۔ پاکستان اسلام کا قلعہ ہے اور حرمت رسول ﷺکے مسئلے پر مسلمان حکمرانوں کو قائدانہ کردار ادا کر نا چاہیے۔مقررین نے مزید کہا کہ نام نہاد دہشت گردی کے خلافجنگ لڑنیو الے مغربی ملکوں کے حکمران شان رسالت ﷺ میں گستاخیاں روکیں عالمی سطح پر تمام انبیاء کی حرمت کے تحفظ کیلئے قانون سازی کی جائے ایسا کرنے سے ہی دنیا میں حقیقی امن قائم ہو سکتا ہے، مسلم حکمرانوں کو یاد رکھنا چاہیے کہ مسلمانوں کی عزت نبی اکرم ﷺ کی حرمت کے تحفظ سے وابستہ ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -