امیر قطر کو گھوڑا بھیجنا ایک پرانی روایت ، عدالت میں شریف خاندان کی تین نسلوں کا احتساب کیا جا رہا ہے: ڈاکٹر مصدق ملک

امیر قطر کو گھوڑا بھیجنا ایک پرانی روایت ، عدالت میں شریف خاندان کی تین نسلوں ...
امیر قطر کو گھوڑا بھیجنا ایک پرانی روایت ، عدالت میں شریف خاندان کی تین نسلوں کا احتساب کیا جا رہا ہے: ڈاکٹر مصدق ملک

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم کے ترجمان ڈاکٹر مصدق ملک نے کہا ہے کہ امیر قطر کو گھوڑا بھیجنا ایک پرانی روایت ہے ،عدالت میں شریف خاندان کی تین نسلوں کا احتساب کیا جا رہا ہے ، شریف خاندان نے تقریباً تمام کاغذات عدالت میں جمع کروا دیے ہیں ، تحریک انصاف والے جلسے جلوسوں میں بڑھ چڑھ کر دعوے کرتے تھے مگر ایک بھی ثبوت پیش نہیں کر سکے۔

نجی ٹی وی  چینل ’’سما نیوز ‘‘ کے پروگرام’’ندیم ملک لائیو‘‘ میں گفتگو کر تے ہوئے ڈاکٹر مصدق ملک نے کہا کہ عدالت میں شریف خاندان کی تین نسلوں کا احتساب کیا جا رہا ہے ،عدالت میں مریم نواز ،وزیراعظم اور وزیراعظم کی والدہ کی ویلتھ سٹیٹمنٹ ،ٹیکس سٹیٹمنٹ ،دبئی کاروبار کے کاغذات ،دبئی مل کی خرید ، اس کی فروخت اور 12ملین درہم رقم کی قطری خاندان کو حوالگی سمیت تقریباً تمام کاغذات اور ثبوت تصویروں سمیت عدالت میں جمع کروا دیے ہیں اور انشاء اللہ ہم بہت جلد عدالت سے سرخرو ہوں گے ۔مصدق ملک نے کہا کہ تحریک انصاف والے جلسے جلوسوں میں بڑھ چڑھ کر دعوے کرتے تھے کہ وہ منی لانڈرنگ کے ثبوت عدالت میں پیش کریں گے مگر انہوں نے ایک بھی ثبوت پیش نہیں کیا ، انکی طرف سے تمام کے تمام دعوے جھوٹے نکلے اور اس بات کو انہوں نے خود بھی قبول کیا ۔

امیر قطرکو گھوڑے کے تحفے کے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ امیر قطر کو گھوڑا بھیجنا ایک پرانی روایت ہے اور تحفے تحائف کے تبادلے میں امیر قطر کی طرف سے بھی بہت کچھ پاکستان کو دیا جاتا ہے ، یہ ایک اچھے تعلقات کی علامت ہے ، یہ کوئی غلط کام نہیں ہو رہا اور یہ تحفہ قطری شہزادے شیخ حامد بن جاسم کو نہیں بھیجا جا رہا ۔

مزید : اسلام آباد