آج بھی مریضوں کو غیر معیاری اسٹنٹس لگائے جا رہے ہیں، چیف جسٹس

آج بھی مریضوں کو غیر معیاری اسٹنٹس لگائے جا رہے ہیں، چیف جسٹس

اسلام آباد(اے این این) غیر معیاری اسٹنٹس کی فروخت سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ آج بھی مریضوں کوغیر معیاری اسٹنسٹس لگائے جا رہے ہیں۔بدھ کو غیر معیاری اسٹنٹس کی فروخت سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں ہوئی۔ اس موقع پر چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ آج بھی مریضوں کو غیر معیاری اسٹنٹس لگائے جا رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ بیانات سے سے عوام میں خوف و ہراس نہیں پھیلانا چاہتے تاہم عدالت شام کو ہونے والے غیر ذمہ دارانہ تبصروں پر پابندی کا فیصلہ کر سکتی ہے۔چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ ہماری اولین ترجیح آئندہ کے لئے معاملے کو بہتر کرنا ہے۔ جسٹس ثاقب نثار نے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کو حکم دیا کہ اسٹنٹس کی رجسٹریشن سے متعلق درخواستوں کا فوری طور پر فیصلہ کیا جائے۔ عدالت نے متعلقہ حکام سے پیر تک رپورٹ طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت منگل ملتوی کردی۔

مزید : علاقائی