راولپنڈی ، نئے بلدیاتی نظام کا کمال ، یونین کونسل ملازمین تنخواہوں سے محروم

راولپنڈی ، نئے بلدیاتی نظام کا کمال ، یونین کونسل ملازمین تنخواہوں سے محروم

راولپنڈی(چوہدری نثار سے) پنجاب بھر میں نیا بلدیات نظام رائج ہونے کے باعث ضلع راولپنڈی میں یونین کونسلز کے بینک اکاؤنٹ نہ کھلنے کی وجہ سے سیکرٹری یونین کونسل،نائب قاصد سمیت سینکڑوں ملازمین کو تاحال تنخواہوں کی ادائیگی نہ ہو سکی،تنخواہیں نہ ملنے کی وجہ سے ملازمین اپنے بچوں کے سکولوں کی فیسیں،گھریلو اخراجات اور مکانوں کے کرایوں کی ادائیگی نہ ہونے کے باعث مشکلات کا سامنے کر رہے ہیں،تفصیلات کے مطابق 31دسمبر 2016کو مشرف دور میں بنائے گئے بلدیاتی نظام کو ختم کر دیا گیا جبکہ یکم جنوری 2017کو پنجاب بھر میں نیا بلدیاتی نظام نافذ کر دیا گیا جس کے تحت بلدیاتی انتخابات ہوئے تھے،پنجاب حکومت کی نا اہلی اور غلط حکمت عملی کے باعث نئے بلدیاتی نظام کے تحت یونین کو نسلز سمیت دیگر سرکاری اداروں کے بینک اکاؤنٹ نہ کھل سکے جس کی وجہ سے یونین کونسلز میں کام کرنے والے سیکرٹری یونین کونسل،نائب قاصد کی تنخواہیں اور کرائے کی عمارتوں میں قائم یونین کونسلز کے دفاترز کے کرایوں کی ادائیگیاں بھی نہ ہو سکیں، ذرائع کے مطابق نئے بلدیاتی نظام کے تحت بینک اکاؤنٹ مارچ سے قبل کھلنے کے کوئی امکانات نہیں ہیں کیونکہ ابھی تک سیکرٹری لوکل گورنمنٹ نئے بینک اکاؤنٹ کھولنے کیلئے جو پالیسی جاری کی ہے اس کے مطابق سیکرٹری یونین کونسل اور چیئرمین یونین کونسل کا ستخطوں سے مشترکہ اکاؤنٹ کھولا جا ئے گا، اس پالیسی کے حوالے سے چیئرمین یونین کونسل سیکرٹری یونین کونسل کے ساتھ تعاون نہیں کر رہے جس کی وجہ سے بینک اکاؤنٹ مارچ سے قبل تک کھلنے کے امکانات نظر نہیں آرہے اور بینک اکاؤنٹ نہ کھلنے کی وجہ سے ملازمین کی تنخواہیں کی ادائیگی بھی نا ممکن ہے جس کی وجہ سے یونین کونسلز کے سیکرٹری اور نائب قاصد تنخواہ نہ ملنے کی وجہ سے پریشان ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر