نجی تعلیمی اداروں کا تعلیمی میدان میں کردار مسلمہ ہے : عبد الرقیب

نجی تعلیمی اداروں کا تعلیمی میدان میں کردار مسلمہ ہے : عبد الرقیب

ہنگو(بیورورپورٹ ) پختونخواہ کے نوجوان انتہائی ذہین ہیں، حصول علم ہر مسلمان مرد اور عورت پر فرض ہے۔ تعلیمی میدان میں پرائیویٹ تعلیمی اداروں کا کردار کسی سے ڈھکی چھپی نہیں۔ بہترین اخلاق اور کردار تعلیم یافتہ معاشرے کی نشاندہی کرتی ہے۔تعلیم کسی بھی قوم یا معاشرے کے لئے ترقی کی ضامن ہے یہی تعلیم قوموں کی ترقی اور زوال کی وجہ بنتی ہے۔دنیا کے ترقی یافتہ ممالک کے ساتھ بندوق کے بجائے قلم کی طاقت سے مقابلہ کرنا ہوگا۔ان خیالات کا اظہار نامور شاعر پشاور یونیورسٹی پشتو سیکشن کے چیئر مین آباسین یوسفزئی، کوہاٹ بورڈ کے چیئرمین عبد الرقیب ، ایم ڈی پیراڈائز چلڈرن اکیڈمی ساجد احمد و دیگر نے ہنگو سروزئی پیرا ڈائز چلڈرن اکیڈمی اینڈ ماڈل کالج میں یوم والدین کی ایک پر وقار تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر علاقائی مشران، والدین، صحافیوں اور طلباء نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ تقریب کے دوران طلباء نے مختلف موضوع پر تقاریر کئے جبکہ طلباء مختلف قسم کے خاکے پیش کرتے ہوئے تقریب کو چا چاند لگا دئیے۔ اس موقع پر اباسین یوسفزئی و دیگر نے کہا کہ پاکستان کے بعد آزاد ہونے والے ممالک ترقی کی دوڑ آج پاکستان سے کئی قدم آگے صف پر کھڑے ہیں جبکہ ترقی یافتہ ممالک کے صفوں میں شامل ہونے کے لئے نوجوانو ں کو تعلیم کے زیور سے آراستہ کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں جدید تعلیم کے ساتھ ساتھ دینی تعلیم وتربیت اور انسان کو انسانیت سے دوستی کے لئے اخلاقی تعلیم کا حصول بھی دور حاضر کی ضرور ت ہے۔ مقررین نے کہا کہ تعلیم کے حصول میں سالوں سے دہشت گردی جیسے رکاوٹین سامنے آئی ہے اور دشمن طاقتیں نوجوانوں کوبدگمان کرتے ہوئے روشن مستقبل سے محروم رکھنے اور ملک کو کمزور کر نے کے درپے ہیں۔اباسین یوسفزئی و دیگر نے کہا کہ پیراڈائز چلڈر اکیڈ می اینڈ ماڈل کالج سروزئی کا شمار ان تعلیمی اداروں میں کیا جاتا ہے جودور جدید کے تقاضوں سے ہم آہنگ ہو کر نوجوانوں کو ایک بہتر مستقبل کی راہ ہموار کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ والدین کو چاہئیے کہ وہ بچوں کو بہتر مستقبل دینے کے لئے تمام تر توانائیاں بچوں کی تعلیم و تربیت پر خرچ کریں تا کہ مستقبل کے معماران قوم ملک کو ترقی یافتہ ممالک کے صفوں میں لاکھڑا کریں ۔ اس موقع پر اباسین یوسفزئی ،چئیر مین عبد الرقیب، ایم ڈی ساجد احمد و دیگر نے بہترین کارکردگی کے حامل طباء میں انعقامات بھی تقسیم کئے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر