ایون فیلڈ ریفرنس،نیب کی غیر ملکی گواہوں کے ویڈیو لنک کے ذریعے بیان ریکارڈ کرنے کی درخواست منظور

ایون فیلڈ ریفرنس،نیب کی غیر ملکی گواہوں کے ویڈیو لنک کے ذریعے بیان ریکارڈ ...
ایون فیلڈ ریفرنس،نیب کی غیر ملکی گواہوں کے ویڈیو لنک کے ذریعے بیان ریکارڈ کرنے کی درخواست منظور

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)احتساب عدالت نے شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈ ریفرنس میںنیب کی غیر ملکی گواہوں کے ویڈیولنک کے ذریعے بیان ریکارڈکرنے کی درخواست منظور کر لی ہے ،اب رابرٹ ریڈلے اورراجہ اخترکے بیانات ویڈیو لنک کے ذریعے قلمبندکئے جائیں گے

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں شریف خاندان کیخلاف ایون فیلڈ ریفررنس میں غیر ملکی گواہوں کے ویڈیو لنک کے ذریعے بیان ریکارڈ کرنے کی درخواست کی سماعت ہوئی، احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے درخواست کی سماعت کی، نیب پراسیکیوٹرسردارمظفرعباسی نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ گواہ بیان ریکارڈ کرانے اورشواہد پیش کرنے کیلئے تیارہیںلیکن امن و امان کی صورتحال کے باعث پاکستان آنے سے انکاری ہیں۔

نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ قانون میں ایسی گنجائش نہیں کہ غیر ملکی گواہ کو پیش ہونے کیلئے مجبور کیا جا سکے،گواہ برطانوی شہری ہیں، پاکستان لانے میں تاخیرہوسکتی ، گواہوں کوپاکستان لانے پرخرچ بھی اٹھانا پڑے گا،عدالت سے استدعا ہے کہ 2 غیر ملکیوں گواہ رابرٹ ریڈلی اور اختر راجہ کاویڈیو لنک کے ذریعے بیان قلمبند کرنے کی اجازت دی جائے ۔

کیپٹن صفدر اور مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اگر ایسا ہے تو پھرمیں بھی کہوں گا نواز شریف کراچی ہیں انہیں بھی وڈیو لنک پر لے لیں، انہوں نے کہا کہ نیب نے جوای میل درخواست کیساتھ لگائی وہ بھی رابرٹ ریڈلے کی نہیں،ای میل راجہ اختر کی طرف سے تحریر کی گئی۔

دوران سماعت پراسیکیوٹر اور وکیل کی طرف سے بھارتی عدالت کے فیصلے کا حوالہ بھی دیا گیا، نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ مہاراشٹراورڈاکٹرپارفل بی کے درمیان کیس میں ویڈیولنک بیان کی اجازت دی گئی،اس پر کیپٹن صفدر اور مریم کے وکیل امجد پرویز نے کہا کہ اس کیس میں کمیشن کے ذریعے ویڈیولنک پربیان کی اجازت دی گئی،اس پر نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ گواہ اور ملزم میں فرق ہوتا ہے۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ایسے تو آپ سی ڈیز کا تبادلہ کرتے رہیں گے،عدالت نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے کہا نیب کی غیر ملکی گواہوں کے بیانات قلمبند کرنے کی درخواست منظور کر لی ،اب رابرٹ ریڈلے اورراجہ اخترکے بیانات ویڈیو لنک کے ذریعے قلمبندکئے جائیں گے، گواہوں کے بیانات 15 فروری کے بعد قلمبند کئے جائیں گے۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد