”واجد ضیا نے پارلیمنٹ کے بارے میں یہ لفظ استعمال کیا ،انہیں اللہ ہی معاف کرے تو کرے “کیپٹن صفدر نے عدالت سے باہر آکر ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

”واجد ضیا نے پارلیمنٹ کے بارے میں یہ لفظ استعمال کیا ،انہیں اللہ ہی معاف کرے ...
”واجد ضیا نے پارلیمنٹ کے بارے میں یہ لفظ استعمال کیا ،انہیں اللہ ہی معاف کرے تو کرے “کیپٹن صفدر نے عدالت سے باہر آکر ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیر اعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے کہا ہے کہ واجد ضیا نے ایک غلط رپورٹ بدنیتی کی بنیاد پر دی ،واجد ضیا کو بلانا ضروری ہے کیونکہ انہوں نے پارلیمنٹ کے لیے جھوٹا جیسے الفاظ کا استعمال کیا ،انہیں اللہ معاف کرے تو کرے ۔ان کا کہنا تھا کہ واجد ضیا کو لکھی ہوئی رپورٹ دی گئی جس پر انہوں نے صرف دستخط کیے ،یہ رپورٹ کہیں اور تیار ہوئی ۔نیب عدالت میں سماعت کے بعد میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے کیپٹن ریٹائرڈ صفدر نے کہا کہ کیس بڑے دلچسپ موڑ پر آگیا ہے ،آج 22کروڑ عوام کے اعتماد کو ٹھیس پہنچا ،اب لگ رہا ہے کہ عوام کو نوٹس دینا پڑے گا ۔

انہوں نے کہا کہ قطری شہزادے کو ویڈیو لنک پر بیان کی اجازت نہیں دی گئی ،ویڈیو لنک بیان ریکارڈ ہونا ہے تو قطری شہزادے کا بھی ہو گا ،کسی اور ویڈیو لنک بیان کو ہم نہیں مانتے ،اس کا کوئی قانون نہیں ،ہمیں ویڈیو لنک بیان کے لیے قانون سازی کرنی ہو گی ۔ان کا کہنا تھا کہ چار سال سے حکومت اپنی ہی لگ رہی تھی مگر ہمارے ہاتھ بندھے ہوئے تھے ،جیسے ہمارے ہاتھ بندھے تھے ایسے قبر میں بھی نہیں بندھے ہوتے ۔توہین عدالت سے متعلق ایک سوال پر جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں عدالت کے حکم پر جے آئی ٹی کے سامنے بھی پیش ہو گیا تھا ،اگر عدالت نے بلا یا تو ضرور جاﺅں گا ۔

مزید : قومی