”ان کی وجہ سے ہی زلزلے آ رہے ہیں کہ شائد۔۔۔“ مہوش حیات نے چہرے کی بجائے جسم کے ایسے حصے کی تصویر اپ لوڈ کر دی کہ نیا ہنگامہ کھڑا ہو گیا، صارفین آگ بگولہ ہو گئے

”ان کی وجہ سے ہی زلزلے آ رہے ہیں کہ شائد۔۔۔“ مہوش حیات نے چہرے کی بجائے جسم ...
”ان کی وجہ سے ہی زلزلے آ رہے ہیں کہ شائد۔۔۔“ مہوش حیات نے چہرے کی بجائے جسم کے ایسے حصے کی تصویر اپ لوڈ کر دی کہ نیا ہنگامہ کھڑا ہو گیا، صارفین آگ بگولہ ہو گئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) اداکار اور اداکارائیں سوشل میڈیا پر اپنی تصاویر اور ویڈیوز اپ لوڈ کر کے صارفین کو نجی زندگی کے بارے میں بھی آگاہ کرتے رہتے ہیں لیکن اس مرتبہ مہوش حیات نے اپنے چہرے کے بجائے جسم کے ایسے حصے کی تصویر اپ لوڈ کر دی کہ نیا ہنگامہ کھڑا ہو گیا اور صارفین غصے سے آگ بگولہ ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ملائکہ اروڑا کی بہن امریتا اروڑا نے اپنی 40 ویں سالگرہ کے موقع پر دنیا کا فحش ترین کیک انتہائی شرمناک طریقے سے کاٹ لیا، سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہو گیا

انہوں نے سوشل میڈیا ویب سائٹ انسٹاگرام پر تصاویر شیئر کی جس میں ان کا چہرہ دوسری طرف تھا جبکہ کمر نظر آ رہی تھی اور جو ٹی شرٹ پہن رکھی تھی اس پر لکھا تھا ”معاف کرنا میں لیٹ ہو گئی، میں آنا نہیں چاہتی تھی۔“

یہ تصویر جیسے ہی سامنے آئی تو ”کی بورڈ وارئیرز“ نے کمر کس لی اور پھر وہی ہوا جو اکثر اداکاراﺅں کی جانب سے تصاویر شیئر کئے جانے پر ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔مولانا طارق جمیل پنجاب میڈیکل کالج فیصل آباد میں خطاب کر رہے تھے کہ زلزلہ آ گیا، پھر انہوں نے کیا کیا؟ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی

ایک صارف کو تصویر دیکھتے ہی معلوم ہو گیا کہ اب کیا ہو گا جس نے لکھا ”میں یہاں صرف کمنٹس پڑھنے آیا ہوں“

ایک اور صارف نے لکھا ”ایمانداری کی بات ہے کہ زلزلے ان لوگوں کی وجہ سے ہی آتے ہیں !!! اللہ ہم سے ناراض ہیں اور وہ زلزلوں سے اپنی ناراضی کا اظہار کرتے ہیں کہ شائد میرے بندے استفغار کر لیں“

ایک اور صارف نے لکھا ”یہ بھی بھولا ریکارڈ کی ویڈیو میں آنا چاہتی ہے“

ایک صارف کا کہنا تھا ”یہاں کولہوں کی تشہیر چل رہی ہے، دلچسپی رکھنے والے افراد جانوروں جیسے جذبات کا اظہار کر کے اپنی سیٹ بک کروا سکتے ہیں“

ایک صارف نے کمنٹس کرنے والوں کو مخاطب کرتے ہوئے لکھا ”واحیات کمنٹس، اس سے آپ کی ذہنی حالت کا اندازہ ہوتا ہے اور اس سے ان لوگوں کی حوصلہ افزائی بھی ہوتی ہے۔ لوگو نظرانداز کرو نظرانداز، اگر آپ چیزوں کو ٹھیک نہیں کر سکتے تو چھوڑ دیں لیکن اس طرح کے کمنٹس مت کریں“

ایک اور صارف نے لکھا ”تنقیدی کمنٹس کا بے صبری سے انتظار کر رہا ہوں“

ایک صارف کا کہنا تھا ”مجھے نہیں معلوم کہ یہ کیا دکھا رہی ہے، اپنا لباس، ٹی شرٹ پر لکھے ہوئے جملے یا پھر اپنے جسم کے حصے؟ اور پھر اس کا مطلب ہی کیا ہے؟ کچھ زیادہ ہی ہو گیا، سمجھ نہیں آ رہا“

ایک صارف نے لکھا ”میں نہیں آ سکتی کیونکہ میں اپنے کولہے دکھانے میں مصروف ہوں۔ پھر کہتے ہیں کہ ریب کیوں ہوتے ہیں، اب کوئی کم عقل یہ تصاویر دیکھ کر کیا سوچے گا“

ایک اور صارف نے لکھا ”ہاں بالک ٹھیک ہے۔۔۔۔ مہوش حیات نہیں ”آنا چاہتی“۔“

ایک اور صارف نے لکھا ”اس پیج کا کمنٹ سیکشن کبھی بھی مایوس نہیں کرتا“

ایک اور صارف نے لکھا ”بہن اپنے آپ کو ڈھانپو، پیچھے سے بہت بری لگ رہی ہو“

ایک صارف نے استغفار پڑھتے ہوئے لکھا ”استغفار۔۔۔ اس نے کیا پہنا ہوا ہے۔۔۔ عجیب ہی دنیا ہو گئی ہے“

ایک اور صارف کا کہنا تھا ”میں تو یہاں خوبصورت سے کمنٹس پڑھنے آیا ہوں“

ایک صارف نے پوچھا ”یہ اپنی کمر کیوں دکھا رہی ہے، ٹراﺅزر دکھانا چاہتی ہے یا کچھ اور“

ایک اور صارف نے لکھا ”مہوش حیات ، مہوش واحیات بن گئی“

ایک اور صارف کا کہنا تھا ”یہ اپنے کولہے شولہے دکھانا چاہ رہی ہے“

مزید : ڈیلی بائیٹس /تفریح