جنسی ہراسگی سے متعلق معلومات کیلئے کتاب مرتب کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،کوہاٹ واقعہ پر خاموشی اختیار کرنے پر عمران خان کو شرم آنی چاہئے:رانا ثنا اللہ

جنسی ہراسگی سے متعلق معلومات کیلئے کتاب مرتب کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،کوہاٹ ...
جنسی ہراسگی سے متعلق معلومات کیلئے کتاب مرتب کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،کوہاٹ واقعہ پر خاموشی اختیار کرنے پر عمران خان کو شرم آنی چاہئے:رانا ثنا اللہ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )پنجاب کے وزیر قانون رانا ثنا اللہ خان نے کہا ہے کہ قصور میں ننھی زینب اور دیگر بچیوں کے قتل کےواقعات نے قوم کا ضمیر جھنجوڑ کر رکھ دیا ہے ، ایسے واقعات ملکی بد نامی کا باعث بنتے ہیں ،ایک سیاسی جماعت سانحہ قصور پر پوائنٹ سکورننگ کرتی رہی ،تحریک انصاف کوہاٹ کے ضلعی صدر کا بھتیجا میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کو قتل کر نے کے بعد ورثا کو دھمکیاں دیتا رہا، تحریک انصاف کے سربراہ کو شرم آنی چاہئے کہ وہ اپنے پارٹی عہدے دار کے خلاف ایکشن لینے کی بجائےخاموش بیٹھا رہا ،وزیر اعلیٰ نے جنسی ہراساں کرنے کے سبق کو نصاب میں شامل کرنے کا حکم دیا جس کے بعد  بچوں کو جنسی ہراسگی سے بچنے کی تعلیم کے حوالے سے نصاب میں سبق شامل کرنے کیلئے علماء کی رائے طلب کی گئی ہے،قصور  واقعے سے متعلق کردار ادا کرنے پر عدلیہ اور آرمی چیف کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

لاہور میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر قانون رانا ثنا اللہ نے کہا کہ سانحہ قصور کا ملزم عمرا ن ننھی زینب کے نماز جنازہ اور دیگر مقامات پر بھی لوگوں کے ساتھ جاتا رہا ، ملزم اس واقعہ کے خلاف احتجاج اور پتھراﺅ بھی کرتا رہا ۔ان کا کہنا تھا کہ جب مجرم کو ڈی این اے پر وفائل کے لیے طلب کیا تو وہ غائب ہو گیا ،اس حرکت سے ملزم پر شک ہو گیا تھا ،مجرم کو دیگر 6افراد سمیت طلب کیا تا کہ اس کو شک نہ ہو ۔راناثنا اللہ نے کہا کہ تفتیش کے دوران ملزم نے پہلے واقعے سے آخری واقعے تک تمام تفصیلات بتائیں ۔ان کا کہنا تھا کہ اس واقعے کے بعد وزیر اعلیٰ نے جنسی ہراساں کرنے کے سبق کو نصاب میں شامل کرنے کا حکم دیا  ، چھوٹے بچوں کو معلومات فراہم کرنے کے لیے ایک کتاب مرتب کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ، اس تعلیمی سلسلے کو اگلی جماعتوں کے بچوں کے لیے بھی بڑھا یا جائے گا ،نصاب میں سبق شامل کرنے کے لیے علما کی بھی رائے طلب کی گئی اور متحدہ علما بورڈ کی میٹنگ میں نصاب سے متعلق مسودہ رکھا گیا ۔رانا ثنا اللہ خان نے کہا کہ انہیں قصور واقعہ کی طرح کوہاٹ میں ننھی اسما اور طالبہ عاصمہ رانی کے قتل پر بھی اتنے ہی افسردہ اور دکھی ہیں ۔انہوںے نے بتایا کہوزیراعلیٰ شہباز شریف نے اس حوالے سے سبق کو نصاب میں شامل کرنے کا حکم دیا جس کے بعد ایک کمیٹی قائم کی گئی ،اس حوالے سے علماء کی بھی رائے طلب کی گئی اور متحدہ علماء بورڈ کی میٹنگ میں بھی مذکورہ مسودہ رکھا گیا،جس نے چھوٹے بچوں کے لئے ایک کتاب مرتب کرنے کا فیصلہ کیا اور اس کا مسودہ تیار کر کے کمیٹی کی منظوری کے بعد وزیر اعلیٰ کو بھجوایا گیا ہے، اس تعلیمی سلسلے کو اگلی جماعتوں  کیلئے بھی بڑھایا جائے گا

مزید : قومی /اہم خبریں