کیمیائی اسلحے سے نئی کارروائی ، بشار الاسد کے خلاف امریکی حملے کا امکان

کیمیائی اسلحے سے نئی کارروائی ، بشار الاسد کے خلاف امریکی حملے کا امکان
کیمیائی اسلحے سے نئی کارروائی ، بشار الاسد کے خلاف امریکی حملے کا امکان

  

واشنگٹن(این این آئی)ایک سینئر امریکی عہدے دارنے کہاہے کہ شام میں نئے کیمیائی حملے ہونے کے الزامات کے بعد ان کے ملک کی وہاں فوجی کارروائی خارج از امکان نہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق مذکوہ عہدے دار نے بتایا کہ بشار الاسد کی حکومت اور داعش تنظیم کی جانب سے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال جاری ہے۔اس حوالے سے دمشق کے مشرق میں محصور شہر دوما پر کیمیائی حملے کی تصدیق ابھی نہیں ہو سکی۔امریکا میں نمایاں عہدے داران نے بتایا کہ اگر ضرورت ہوئی تو صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ شامی فوج کے خلاف ایک اور عسکری کارروائی کے لیے تیار ہے تا کہ اسے کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال سے باز رکھا جا سکے۔

ایک عہدے دار نے اپنا نام ذکر نہ کرنے کی درخواست پر بتایا کہ اگر عالمی برادری کی جانب سے بشار الاسد پر دباؤ جلد از جلد نہ بڑھایا گیا تو شامی کیمیائی ہتھیار پھیل جائیں گے اور شاید امریکا تک بھی پہنچ جائیں۔دوسری جانب امریکی وزارت خارجہ کی ترجمان ہیدر نوورٹ نے کہا کہ امریکا کو اس رپورٹ پر انتہائی تشویش ہے جس میں کہا گیا کہ شامی فورسز نے حال ہی میں مشرقی غوطہ پر حملوں میں کلورین گیس کو بطور ہتھیار استعمال کیا۔

لائیو ٹی وی دیکھنے کے لئے اس لنک پر کلک کریں

مزید : بین الاقوامی