انسانوں کے بعد مرغیاں بھی محفوظ نہ رہیں، آدمی مرغی کے ساتھ ایسا شرمناک ترین کام کرتے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا کہ سن کر ہی انسان شرم سے پانی پانی ہوجائے

انسانوں کے بعد مرغیاں بھی محفوظ نہ رہیں، آدمی مرغی کے ساتھ ایسا شرمناک ترین ...
انسانوں کے بعد مرغیاں بھی محفوظ نہ رہیں، آدمی مرغی کے ساتھ ایسا شرمناک ترین کام کرتے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا کہ سن کر ہی انسان شرم سے پانی پانی ہوجائے

  

نیروبی(نیوز ڈیسک) کیا زمانہ آ گیا ہے، انسان تو انسان مرغیوں کی عزت بھی محفوظ نہیں رہی۔ کینیا میں پیش آنے والے دردناک واقعے کو ہی دیکھ لیجئے۔ یہاں ایک وحشی نوجوان نے اپنی جنسی ہوس پوری کرنے کی کوشش میں ہمسائے کی دو مرغیوں کی جان لے لی۔

ویب سائٹ ’ورلڈ وائڈ وئیرڈ نیوز‘ کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ بومٹ کاؤنٹی کے نواحی علاقے میں پیش آیا۔ رچرڈ کبور ٹونی نامی ایک کسان کی 2مرغیاں پراسرار طور پر غائب ہو گئیں تو پورے گاؤں میں شور مچ گیا۔ رچرڈ نے سب کو خبردار کر دیا اور ہر کوئی مرغیوں کو ڈھونڈنے لگا۔ چند گھنٹے بعد لوگوں نے دیکھا کہ الفرڈ موتائی نامی ایک نوجوان 2 مردہ مرغیوں کو کچرے کے ڈھیر پر پھینک کر فرار ہو رہا تھا۔ اسے فوری طور پر پکڑ لیا گیا، لیکن جب مرغیوں کی حالت دیکھی تو لوگوں کی آنکھوں سے آنسو چھلک گئے۔ایک دیہاتی نے بتایا کہ دونوں مرغیوں کی حالت سے ظاہر تھا کہ انہیں انتہائی بے رحمی سے زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

غصے سے آگ بگولا لوگوں نے الفرڈ کی پٹائی شروع کر دی اور اسے ساری بات بتانے کو کہا۔ ظالم نوجوان نے بتایا کہ اس نے اپنے ہمسائے کی غیر موجودگی سے فائدہ اٹھاتے ہوئے اس کی دونوں مرغیاں چرا لیں اور انہیں یکے بعد دیگرے ہوس کا نشانہ بنایا۔ اس کا کہنا تھا کہ وہ پہلی مرغی سے زیادتی کر رہا تھا کہ اس کی موت ہو گئی جس کے بعد اس نے دوسری مرغی سے زیادتی شروع کر دی اس کے مرنے تک اسے ہوس کا نشانہ بناتا رہا۔

ملزم کی جی بھر کر پٹائی کرنے کے بعد دیہاتیوں نے اسے پولیس کے حوالے کر دیا۔ اس کے خلاف چوری، جانوروں پر ظلم اور غیر فطری جنسی عمل کے الزامات کے تحت قانونی کاروائی کی جا رہی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس