این اے 132، پی پی 175، 179ن لیگ ، پی ٹی آئی میں کانٹے دار مقابلہ متوقع

این اے 132، پی پی 175، 179ن لیگ ، پی ٹی آئی میں کانٹے دار مقابلہ متوقع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                            کھڈیاں خاص ( مرزا فہیم الحسن)پورے ملک کی طرح قومی اسمبلی کے حلقہ 132 قصور میں سیاسی سرگرمیاں عروج پر پہنچ گئیں این اے 132 میں کل 30 امیدوار نے کاغذات نامزدگی جمع کروائے تھے جس میں سابقہ وزیر اعظم میاں شہباز شریف بھی شامل ہیں۔ قومی اسمبلی حلقہ 132 قصور میں کل ووٹرز کی تعداد 526156 ہے اور کل پولنگ اسٹیشن کی تعداد 342 ہے جس میں مردوں کےلئے 583 جبکہ عورتوں کے لیے 498 پولنگ بوتھ قائم ہو نگے اس حلقہ میں مسلم لیگ ن کی طرف سے سابقہ وزیر اعظم میاں شہباز شریف جبکہ تحریک انصاف کے حمایت یافتہ امیدوار سردار محمد حسین ڈوگر الیکشن لڑیں گے حلقہ پی پی 175 میں مسلم لیگ ن کے امیدوار ملک رشید احمد جبکہ سردار راشد طفیل خان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ امید وار ہیں اس طرح پی پی 179 سے مسلم لیگ ن کے نامزد امیدوار ملک احمد خاں جبکہ تحریک انصاف کی جانب سے سردار نادر فاروق امیدوار ہیںبظاہر یہ حلقہ مسلم لیگ ن کا گڑھ سمجھا جاتا ہے جس کی وجہ یہاں پر مسلم لیگ ن کے سینئر ارکان ملک محمد احمد خاں اور ملک رشید احمد خاں کا حلقہ میں ورک ہے۔ شاید یہی وجہ تھی کہ مسلم لیگ ن نے اپنے تاریخ کے دو بڑے جلسے کھڈیاں خاص میں کیے جس میں پہلا جلسہ مسلم لیگ ن کی پیٹرن چیف مریم نواز جبکہ دوسرا جلسہ سابق وزیر اعظم و صدر مسلم لیگ ن میاں شہباز شریف نے کیا جبکہ دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ سردار محمد حسین ڈوگر کا ووٹ بنک بھی اس حلقہ میں موجود ہے سردار محمد حسین ڈوگر پہلے بھی پیپلز پارٹی کے دور میں ایم پی اے منتخب رہ چکے ہیں۔ علاوہ قرآن و سنہ موومنٹ کے علامہ ابتسام الٰہی ظہیر بھی اسی حلقہ سے امیدوار ہیں جنہیں جماعت اسلامی مرکزی مسلم لیگ سمیت اہلحدیث مکتب لوگوں کی حمایت حاصل ہے متوقع مقابلہ میاں شہباز شریف اور پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ امیدوار سردار محمد حسین ڈوگر کے درمیان ہی ہوگا۔ 

این اے 132